ورلڈ ہیڈر ایڈ

افغان صدر اشرف غنی بال بال بچے گئے، افغانستان پھر دھماکوں سے لرز اٹھا

افغانستان ایک بار پھر دھماکوں سے لرز اٹھا میں منگل کے روز ہونے والے دو دھماکوں میں درجنوں افراد ہلاک اور زخمی ہو گئے۔ پہلا دھماکہ دارالحکومت کابل جب کہ دوسرا دھماکہ ملک کے وسطی صوبے پروان میں ہوا۔افغان صدر اشرف غنی بال بال بچے گئے، افغانستان پھر دھماکوں سے لرز اٹھا

تفصیلات کے مطابق پروان میں صدر اشرف غنی کے انتخابی مجمع کی سمت جانے والے راستے پر ایک چیک پوائنٹ کے نزدیک موٹر سائیکل پر سوار خود کش بم بار نے خود کو دھماکے سے اڑا دیا۔افغان صدر انتخابی مہم میں مصروف تھے دھماکہ ہو گیا. کہ اشرف غنی موقع پر موجود تھے تاہم انہیں کوئی ضرر نہیں پہنچا۔ حملے میں 24 افراد ہلاک اور 31 زخمی ہوئے۔ ہلاک اور زخمی ہونے والوں میں بڑی تعداد خواتین اور بچوں کی ہے۔
واضح رہے کہ افغانستان کی صورت حال میں‌بہتری کی کچھ امید ہونے جا رہی تھی لیکن ٹرمپ کی جانب سے مذاکرات کو معطل کرنے سب امیدیں دم توڑ گئیں
واضح رہے کہ اب تک امریکا اور طالبان کے درمیان افغانستان میں امن عمل کیلئے 9 مذاکرات ہوئے جن کا اہتمام دوحہ میں کیا گیا تھا۔
قبل ازیں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں کابل میں حملے کے بعد افغان طالبان کے ساتھ امن مذاکرات معطل کرنے کا اعلان کیا تھا۔ امریکہ اور افغان طالبان کے حوالے سے چند ہفتے قبل ہی باغی ٹی وی نے مذاکرات ناکام ہونے کی پشین گوئی کردی تھی اور بالآخر پھر وہی ہوا

افغانستان میں‌روزانہ کتنے سیکیورٹی اہلکار ہلاک ہو رہے جان کر حیران رہ جائیں،

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.