بلوچستان اکتوبر میں 127 افراد جاں بحق.

بلوچستان کی شاہرائیں انسانوں کو نگلنے لگیں، اکتوبر میں 127 افراد جاں بحق ہوۓ بلوچستان کی شاہرائیں انسانوں کو نگلنے لگیں، اکتوبر میں 127 افراد جاں بحق 1388زخمی بلوچستان یوتھ اینڈ سول سوسائٹی کے جاری کردہ اعداد وشمار کے مطابقبلوچستان میں اکتوبر کے مہینے میں 1025 حادثات رو نما ہوئے جن میں127 افراد جاں بحق اور 1388 زخمی ہوئے.
جن کی مزید تفصیل کچھ اس طرح ہے
بلوچستان: اکتوبر کے مہینے میں 1025 حادثات رو نما ہوئے جن میں 127 افراد جاں بحق اور 1388 زخمی ہوئے ہیں۔
کوئٹہ، مستونگ پشین ، قلات بوستان، کچلاک 252 حادثات 350 زخمی اور 38 اموات۔

خضدار، سوراب، لسبیلہ، گڈانی، حب، وندر، اوتھل، 465 حادثات، 593 زخمی اور 42 اموات ۔

چمن، قلعہ عبدوللہ، مسلم باغ ، قلعہ سیف
اللہ گلستان، 69 حادثات، 99 زخمی اور 7 اموات۔

ژوب زیارت ہرنائی لورلائی دکی ،شیرانی خانوزئی، کاں میترزئی، سنجاوی، مانی خواہ، بادیزئ،
110 حادثات، 129 زخمی اور 10 اموات۔

نوشکی خاران ،دالبندین، ،چاغی، بیسیمہ، نوکنڈی
37 حادثات، 61 زخمی اور 4 اموات۔

گوادر، تربت،، اورماڑا، پسنی، پنجگور، کیچ،
33 حادثات، 49 زخمی اور 4 اموات۔

سبی، بولان، نصیرآباد، ڈیرہ مراد جمالی، ،بارکان، صحبت پور، ڈیرہ بگٹی ،جل مگسی، اوستہ محمد، جعفرآباد، سوئی، کوہلو،
59 حادثات، 107 زخمی اور 22 اموات۔

اموات میں 15 معصوم بچے اور 13 خواتین شامل ہیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.