ورلڈ ہیڈر ایڈ

خاوند اور سسرالیوں کے مبینہ تشدد اور غلط کام سے انکار کرنا جرم بن گیا

چنیوٹ
خاوند اور سسرالیوں کے مبینہ تشدد اور غلط کام سے انکار کرنا جرم بن گیا۔جھوٹی درخواستوں اور انتقامی کارروائی سنگین نتائج کی دھمکیوں سے دلبرداشتہ خاندان کا ڈسٹرکٹ پریس کلب کے سامنے احتجاج وزیر اعلیٰ پنجاب سے انصاف اور تحفظ فراہم کرنے کا مطالبہ
تھانہ سٹی چنیوٹ کے علاقہ محلہ غفور آباد کے حاجی محمد خالد اور اس کی بیٹی مہوش بتول و دیگر خاندان کا ڈسٹرکٹ پریس کلب چنیوٹ کے سامنے احتجاجی مظاہرہ متاثرہ خاندان کے مطابق ان کی بیٹی مہوش بتول کی محلہ شیر پورہ کے خضر حیات سے شادی ہوئی خضر حیات اور اس کا خاندان مہوش بتول کو تشدد کے ساتھ ساتھ غلط کاموں پر اکساتا تھا جس پر مہوش نے ظالم خاندان سے بھاگ کر جان بچائی اور طلاق لے لی عدالت کے فیصلہ پر جہیز کا سامان لینے گئے تو خضر حیات وغیرہ حملہ آور ہو گئے فائرنگ اور تشدد کا نشانہ بنایا جس پر تھانہ سٹی کو دی جانے والی درخواست پر کارروائی نہ ہو سکی متاثرہ خاندان کا کہنا تھا کہ مہوش کے سسرال والے پولیس کو جھوٹی درخواستیں دے کر ہراساں کرنے کے ساتھ ساتھ سنگین نتائج کی دھمکیاں دے رہے ہیں جہیز واپس کرنے سے انکاری ہیں متاثرہ خاندان نے وزیر اعلیٰ پنجاب اور ڈی پی او چنیوٹ سے ظالم خاندان کے خلاف کارروائی اور جہیز واپس دلوانے تحفظ فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.