fbpx

رجسٹری برانچ میں اندھیر نگری چوپٹ راج

قصور
رجسٹری برانچ میں کرپٹ مافیا کا راج کچھ دنوں پہلے ڈپٹی کمشنر قصور نے رجسٹری محرر شیخ بلال احمد دفتر میں لیٹ آنے کی وجہ سے معطل کر دیا گیا جس کے بعد رجسٹری محرر لیاقت بانڈے کو لگا دیا جس نے آتے ہی کرپشن کا راج کرنا شروع کر دیا تمام رجسٹری پاس کرانے کی اپنے ریٹ مقرر کر رکھے ہیں کھلے عام دفتر میں رشوت جاری ہے ہر رجسٹری کے پانچ ہزار روپیہ اور کمرشل کے الگ الگ ریٹ مقرر کر رکھے ہیں ڈپٹی کمشنر قصور کو چاہیے کہ کرپٹ مافیا کے خلاف فی الفور ایکشن لیں تاکہ رجسٹری کی برانچ میں کرپشن ختم ہو سکے ایماندار دیانتدار رجسٹر لگایا جائے عوامی سماجی و دینی حلقوں وہ شہریوں نے میڈیا کے نمائندوں کو بتایا رجسٹری برانچ میں روزانہ کی بنیاد پر لاکھوں روپے کی کرپشن ہوتی ہے جو رجسٹری پاس کرانے کی رقم نہ دے اس کی رجسٹر پاس نہیں کی جاتی یا تو کوئی نہ کوئی اعتراض لگا دیا جاتا ہے جس کی وجہ سے مواد کو مجبورا پیسے دے کر اپنی رجسٹریشن پاس کرنی ہوتی ہیں اور عوام کا یہ بھی کہنا تھا لیاقت بانڈے پہلے بھی رجسٹری محرر رہ چکے ہیں اور کرپشن کی بنا پر کئی مقدمات اینٹی کرپشن میں درج ہیں اور کی دراز سے زیر سماعت چل رہی ہیں کرپٹ مافیا نے آتے ہیں کھلم کھلا رشوت شروع کر دی ہے ضلعی انتظامیہ کے چند قدم آگے رشوت کا بازار گرم ہے مگر کوئی پوچھنے والا نہیں عوام نے مطالبہ کیا ہے وزیر اعلی پنجاب ایکشن ٹیم بنا کر کرپٹ مافیا کے خلاف کارروائی کریں تو پھر ہیں نظام چل سکتا ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.