عارف والا

عارف والا .( حافظ خالد امین)
کرونا وائرس کے پیش نظر ایل بلاک بھٹہ نمبر 1 کی گلیوں میں جراثیم کش سپرے کی جا رہی ہے.تا کہ عوام کو ہر ممکن کرونا سے تحفظ دیا جا سکے.
جس کا کوئی نہیں اُس کا خدا ھے یارو
عارفوالا شہر کی عجب کہانی
عارفوالا/ آج شہر عارفوالا کے باسی اس مشکل وقت میں کسی مسیحا کے متلاشی تھے کہ قدرت نے ایسے میں ایک رحم دل غرباء مساکین اور بے یارومددگار شہریوں کے مسیحا کے دل میں خیال ڈالا اور اس غریب پرور انسان نے پہلے بغیر کسی نمود ونمائش کے حق داروں کو ڈھونڈ ڈھونڈ کر ساری ساری رات اپنی نگرانی میں مستحق افراد کے گھروں میں بڑی راز داری سے راشن پہنچایا جس کا شمار کرنا ناممکن ھے اور پھر اس موذی مرض کی طرف رب کائنات نے توجہ مبذول کروائی تو اپنی گرہ سے پورے شہر میں گورنمنٹ آف پاکستان کے WHO سے منظور شدہ کرونا کش اسپرے کا بیڑہ اُٹھایا جب کہ اس شہر کے بہت بڑے بڑے رائیس ایم این اے موجودہ سابقہ ایم این صاحبان موجودہ ایم پی اے جو غریبوں کا اپنے آپ کو ہمدرد کہلاتا ھے جس کے قصیدے میرے جیسے کئی لوگ دن رات الاپتے ہیں اور نہ سابقہ کسی ایم پی اے نہ ضلع کونسل چیرمین اور نہ ھی ایسے میں کسی اور کو مخلوق خدا کی فکر لاحق ھوئی ایک مرد قلندر جو بے لوث عوام کا دکھ دل میں رکھتا ھے اسے ھی خیال آیا اور اپنی گرہ سے نہ حکومت وقت سے کوئی ایڈ نہ کسی سے شراکت داری بلکہ خود پورے عارفوالا کو کرونا جیسی موذی بیماری سے پاک کرنے کیلئے اسپرے شروع کروائی جس کی نگرانی سوشل ورکر چوہدری محمد اقبال و دیگر ٹیم کے لوگ کرتے ہیں اور دن رات ایک کرکے تقریباً شہر کا ایک تہائی حصہ اسپرے کر دیا گیا ھے بقایا بھی انشاءاللہ جلد مکمل کر دیا جائے گا مساجد کو خصوصی طور پر اسپرے کیا جاتا ھے اللہ پاک اس کی مخلوق کا غم دل میں رکھنے والے کو اپنی رحمت اور عزتوں سے نوازے لوگ جھولیاں اُٹھا اُٹھا کر اسے دل سے دعائیں دے رھے ہیں میرا مقصد کسی کی دل آزاری نہیں بہت دنوں سے مختلف احباب کے مختلف لوگوں کے قصیدے نظر سے گزر رھے تھے سوچا اگر اس گمنام خدا کے بندے کا ذکر نہ کروں تو اس کے ساتھ تو کیا اپنے قلم کے ساتھ نہ انصافی ھے دعا ھے رب ذوالجلال سے کہ وہ ایسے نیک دل انسان فرشتہ انسان کو اپنی رحمتوں سے نوازتا رھے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.