fbpx

قتل کے مقدمہ میں نامعلوم افراد پولیس کی کمائی کا ذریعہ

قصور
قصور تھانہ بی ڈویژن کے حدود میں مقدمہ قتل نمبر 615 /21 میں نامعلوم ملزمان پولیس کی کمائی کا ذریعہ بن گئے گزشتہ روز تھانہ بی ڈویژن پولیس کے سب انسپکٹر محمد اقبال نے محلہ جماعت پورا میں مقدمے میں نامعلوم ملزم حفیظ کے رشتے داروں کے گھر دروازے توڑتے ہوئے چار دیواری کا تقدس پامال کرتے ہوئے احفیظ کے رشتے داروں زبیر اور نعیم نامی نوجوان کو حراست میں لے لیا اور ان کے گھر کی تلاشی کے دوران قیمتی سامان موٹر سائیکل اور ایک عدد موبائل فون بھی ساتھ لے گئے غیر قانونی حراست میں لئے گئے دونوں افراد کو اہل خانہ کے سامنے شدید تشدد کیا
بعد ازاں اہل محلہ کی مداخلت کے بعد اپنے ساتھ پولیس سٹیشن لے گئے جہاں پر تاحال غیر قانونی حراست میں ہیں رابطہ کرنے پر سب انسپکٹر اقبال احمد نے بتایا کہ جب تک نامعلوم ملزم حفیظ کو پیش نہیں کیا جاتا اس وقت تک ان کو بھی نہیں چھوڑا جائے گا زبیر اور نعیم کے اہل خانہ وزیر اعلی پنجاب اور آئی جی پولیس ڈی اور پی او قصور سے مطالبہ کیا ہے کہ افراد کو فوری طور پر چھوڑا جائے اور ذمہ داران کے خلاف قانون کے مطابق مقدمہ درج کیا جائے