مریضوں کے ساتھ غیر انسانی سلوک

چنیوٹ
ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر اسپتال چنیوٹ میں مریضوں کے ساتھ غیر انسانی سلوک برقرارٹراما روم میں ایڈمن انچارج نے شدید زخمی غریب شہری کا علاج کرنے اور اسکی پٹی کرنے سے انکار کردیا
حادثہ میں زخمی ہونے والا شہری جب پٹی کروانے ڈی ایچ کیوں پہنچا تو ایڈمن انچارج نے یہ کہہ کر پٹی کرنے سے منع کردیا کے تم نشئی ہو ہم تمہارا علاج نہیں کریں گے اور اسپتال ایمرجنسی وارڈ عملہ کو اس بات کی بھی دھمکی دی گئی کہ اگر کسی نے زخمی کو طبی امداد فراہم کی تو اس کے خلاف انتقامی کارروائی ہوگی جبکہ مریض اسپتال عملہ سے طبی امداد کے لئے منت سماجت کرتا رہا کہ میرا علاج کریں میں بھی دوسرے لوگوں کی طرح عام شہری ہوں میرا بھی اتنا ہی اس ہسپتال پر حق ہے جتنا ایک عام شہری کا مجھے ہسپتال سے نہیں نکال سکتے لیکن ایڈمن انچارج نے اس مریض کی ایک بھی نہیں سنی اور سیکورٹی گارڈ کی مدد سے ہسپتال سے باہر نکال دیا گیا ایڈمن اسپتال کو فوٹیج میں دیکھا جاسکتا ہے کہ وہ مریض سے کہہ رہا ہے کہ ہم جسے چاہیں دھکے دے کر ہسپتال سے باہر نکال دیں ڈی ایچ کیو چنیوٹ میں اسپتال عملہ کی جانب سے مریضوں کے ساتھ غیر انسانی سلوک پر متعلقہ ضلعی افسران مجرمانہ خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں متاثرہ شخص نے وزیراعظم پاکستان عمران خان وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار اور صوبائی وزیر صحت پنجاب سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.