مظفرگڑھ کے رمضان بازار میں سہولیات کافقدان

رمضان کا پہلا عشرہ ختم ہونے کو ہے لیکن مظفرگڑھ کے رمضان بازار کے حالات نہ بدل سکے۔آٹا اور چینی کے حصول کے لئے خواتین گھنٹوں قطاروں میں لگنے پر مجبور ہیں۔گھنٹوں لائنوں میں لگنے پر بھی عام شہریوں کوتوصرف دوکلو چینی اور 10کلو آٹے کا تھیلہ ملتا ہے جبکہ سفارشیوں کو بغیر لائنوں کے کئی کئی کلو چینی اور کئی تھیلے آٹا مل رہاہے ۔اسی طرح رمضان بازار میں خریداری کے لئے آنے والی خواتین کے لئے بیٹھنے کے لئے کرسیاں بھی نہیں لگائی گئیںیہی وجہ ہے کہ شہر کے دور دراز علاقوں سے آنے والی خواتین اپنے معصوم بچوں کے ہمراہ گرم فرش کے اوپر بیٹھنے پر مجبور ہیں ۔رمضان بازار میں آنے والے شہریوں کے لئے پنکھے تک نہیں لگائے گئے اس کے برعکس رمضان بازار کا عملہ کرسیوں پر برجمان پنکھوں کی ٹھنڈی ہوا سے مستفید ہورہا ہے۔ناقص انتظامات اور لمبی قطاروں پر شہر یوں کے احتجاج کے باوجود انتظامیہ ٹس سے مس نہ ہوئی ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.