ورلڈ ہیڈر ایڈ

پنجاب کے 21 میں سے 18اضلاع جبکہ سندھ کے 8 اضلاع سے کپاس کی آمد میں کمی

ملتان۔ (اے پی پی) پاکستان کاٹن جنرز ایسوسی ایشن (پی سی جی اے)کے جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق پنجاب کے کپاس پیدا کرنیو الے 21 اضلاع میں سے 18اضلاع جن میں ملتان،لودھراں،خانیوال،مظفرگڑھ، ڈیرہ غازی خان، راجن پور، لیہ،وہاڑی،ٹوبہ ٹیک سنگھ،فیصل آباد،جھنگ،،بھکر،سرگودھا،رحیم یارخان، بہاولپور اوربہاولنگرکے اضلاع میں گزشتہ سال کے مقابلے میں 14.15سے لے کر100فیصدکم کپاس جیننگ فیکٹریوں میں آئی۔جبکہ پنجاب کے اضلاع قصوراور میانوالی کے پیداواری تاہم موصول نہیں ہوئے۔ سندھ کے 11میں سے 8اضلاع میں سانگھڑ،نواب شاہ، نوشہروفیروز، خیرپور، سکھراورجامشوروکے اضلاع میں کپاس کی پیدوارمیں 10.91فیصدسے لے کر82.80فیصدتک کم کپاس جیننگ فیکٹریوں میں آئی جبکہ گھوٹکی اوردادواضلاع کی جننگ فیکٹریوں میں پہنچنے والی کپاس کے اعدادوشمار ابھی تک موصول نہیں ہوئے۔صوبہ بلوچستان میں 31.86فیصد کم پیداوار جننگ فیکٹریوں میں پہنچی۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.