پیپلزپارٹی کے مرکزی رہنما قمرالزماں کائرہ کی چنیوٹ آمد

پاکستان پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما قمر الزمان کائرہ کی چنیوٹ میں میڈیا ٹاک،، حکومت پر لفظوں کے نشتر چلا دیئے
ملکی معیشت تاریخ کی بد ترین سطح پر پہنچ گئی، ہسپتالوں میں دوائیں نایاب، مہنگائی عروج پر کر کے واقعتاً غربت نہیں غریب مارنے کی پالیسیوں پر کام کیا جا رہا ہے اسمبلی کے فلور پر بلاول بھٹو کی حکومت کو تعاون کی پیشکش کو این آر او مانگنے سے تعبیر کیا گیا مگر ہم تو چاہتے ہیں کہ موجودہ حکومت اپنی ساری برائیوں کیساتھ اپنا وقت پورا کرے،،،، یہ کہنا تھا پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر قمر الزمان کائرہ کا، انہوں نے مزید کہا کہ ساری دنیا کے اداروں کیمطابق ملک کے حالات بہت خراب ہیں اور حکومت کو یا تو راہ راست پر لائیں گے یا پھر چلتا کریں گے اور بجٹ میں اگر طاقتور کو چھوڑ کر صرف غریبوں کو پیسا گیا تو شدید احتجاج کریں گے انہوں نے محسن داوڑ اور قاضی فائز عیسیٰ کے معاملے پر کہا کہ میڈیا ٹرائل کے بجائے قانونی راستہ اختیار کیا جائے کیونکہ کسی کیخلاف غداری کے ثبوت ہیں تو عدالت ہی بہتر راستہ ہے اور جسے آج غدار کہا جا رہا ہے اسی کے کہنے پر بل پاس کیا گیا تب پتہ نہیں چلا کہ محسن داوڑ غدار ہے؟ اور باقی ایشوز کی طرح قاضی فائز عیسیٰ کے معاملے میں بھی سب درست نہیں ہو رہا اور افواج پاکستان کو ضرورت کیمطابق بجٹ ملنا چاہیے اور آرمی کے بجٹ میں کٹوتی اچھا عمل ہے لیکن اس کے ساتھ کچھ عالمی اداروں کے اعتراضات بھی موجود ہیں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.