fbpx

مقبوضہ کشمیرمیں ایک اور بھارتی فوجی نے خودکشی کرلی

سری نگر: مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فوجی نے خودکشی کرلی۔

باغی ٹی وی : کشمیری میڈیا کے مطابق بھارتی سیکورٹی فورسزکے اہلکارنے سرینگرمیں خودکشی کرلی۔ بھارتی فوجی نے سرکاری اسلحے سے خودکشی کی بھارتی فوجی کا تعلق گجرات سے تھا اوروہ کچھ عرصے سے ڈسٹرکٹ سرینگرمیں تعینات تھا۔حکام کا کہنا ہے کہ خودکشی کے واقعہ کی تحقیقات کی جارہی ہیں۔

بھارتی فوج کی فائرنگ سے مزید 2 کشمیری نوجوان شہید

اس قبل بھی مقبوضہ کشمیرمیں متعدد بھارتی فوجی خودکشی کرچکے ہیں گزشتہ برس 13 دسمبر مقبوضہ کشمیرمیں قابض بھارتی فورسزکے میجرنے خودکشی کرلی تھی مقبوضہ کشمیر کے رام بن ضلع میں تعینات بھارتی فوج کے کمانڈر میجر پرویندر سنگھ نے سرکاری اسلحے سے اپنے گھرمیں خود کشی کی میجر پرویندر سنگھ 23 راشٹریہ رائفلز کی الفاکمپنی میں بطور میجر جنرل ذمہ داریاں انجام دے رہا تھا، جس نے اپنے کوارٹر میں اے کے 47 سرپر رکھ کر چلا دی۔

13 سالہ کشمیری بچی کی دل دہلا دینے والی ویڈٰیو سوشل میڈیا پر وائرل

اہلکاروں نے بتایا تھا کہ کہ انہوں نے دروازے کو طاقت سے کھولا تو اندر فوجی لہولہان پڑا تھا، جسے اسپتال لے کر پہنچے تو ڈاکٹرز نے موت کی تصدیق کی۔خودکشی کرنے والے میجر کے قریبی ساتھیوں نے بتایا تھا کہ وہ ڈیوٹی کی وجہ سے اہل خانہ سے دوری اور خاندانی مسائل کی وجہ سے ذہنی دباؤ کا شکار تھا اور اُس نے گھر جانے کے لیے چھٹی کی درخواست بھی دی تھی۔

قبل ازیں اکتوبر 2021 میں مقبوضہ کشمیر کے ضلع پلوامہ کے علاقے راجپورہ میں قائم فوجی کیمپ میں تعینات بھارتی فوجی نے گولی مار کر خودکشی کرلی، جس کی شناخت سیپوئے اسٹیفن کے نام سے ہوئی ہے تھی خودکشی کرنے والے فوجی کا تعلق 42 آر آر کیمپ سے تھا، جس نے خود کو کمرے میں سرکاری رائفل سے گولی ماری۔

کیمپ میں موجود اہلکاروں نے بتایا تھا کہ وہ اپنے کاموں میں مصروف تھے کہ اسی دوران فائر کی آواز آئی، جس کی سمت کا تعین کرتے ہوئے ایک کمرے کے پاس پہنچے تو اُس کا دروازہ بند تھا انہوں نے دروازے کو طاقت سے کھولا تو اندر فوجی لہولہان پڑا تھا، جسے اسپتال لے کر پہنچے تو ڈاکٹرز نے موت کی تصدیق کی۔

سید علی گیلانی اس دنیا سے جانے کے بعد بھی بھارت کا اصل چہرہ بےنقاب کر گئے

جبکہ اس سے پہلے 20 فروری کو مقبوضہ کشمیر کے ضلع کٹھوعہ میں تعینات بھارتی سیکیورٹی فورس بٹالین 90 کے اسسٹنٹ کمانڈنگ افسر’ی وی یادیو‘ نے 20 فروری کی صبح اپنی ہی سرکاری رائفل سے خود کو گولی ماری تھی۔

واضح رہے کہ کشمیر میں نہتے کشمیریوں پرظلم ڈھانے والے تعینات سیکڑوں بھارتی فوجی اس سے پہلے بھی ذہنی اور نفسیاتی مسائل سے تنگ آکر خودکشی کرچکے ہیں۔ جنوری 2007 سے اب تک خودکشی کرنے والے فوجیوں کی تعداد 525 تک پہنچ گئی ہے۔

سیاسی و دفاعی مبصرین کا کہنا ہے کہ کشمیر میں تعینات بھارتی فوجی دماغی صحت ، پریشانیوں اور گھریلو مسائل کا شکار ہوتے ہیں، جس کی وجہ سے وہ انتہائی قدم اٹھا کر اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیتے ہیں-

سری نگر:دہشتگردی کی مالی معاونت کے الزام میں کشمیری رہنما خرم جاوید گرفتار