14 سالہ بچے نے خفیہ ایجنسی کا کوڈ ایک گھنٹے میں حل کر لیا

0
46

دنیا بھر کی خفیہ ایجنسیاں اہم رازوں کیلئے مشکل ترین کوڈز کا استعمال کرتی ہےتاکہ اسے کوئی اور نہ جان سکے اور یہ معلومات خفیہ ہی رہیں،لیکن تسمانیہ سےتعلق رکھنےوالے 14 سالہ بچےنےماہرین کو حیران کردیابچےچاندی کےایک سکےپرانٹیلی جنس اورسائبرسیکیور ٹی ماہرین کی جانب سے اعداد اور حروف پر مشتمل مشکل ترین کوڈ صرف ایک گھنٹے میں حل کرلیا ہے۔

واٹس ایپ کی ڈیلیٹ میسجز کے حوالے سے فیچر کی آزمائش

باغی ٹی وی : آسٹریلین انٹیلی جنس کے ادارے کی جانب سے سائبرسیکیورٹی ٹیم نے 75 ویں سالگرہ پر ایک خصوصی سکہ جاری کیا، 50 پیسے کے اس یادگاری سکے پر ایک کوڈ درج تھا جس کے پانچ مراحل تھےجس کے 4 مراحل ایک بچے نےایک گھنٹے میں حل کر لیےتاہم اس کا پانچواں مرحلہ اب تک کوئی حل نہیں کرسکا ہے۔

سکے کو ایسے تیار کیا گیا تھا، جس میں کوڈ حل کرنے کے اشارے دونوں طرف موجود تھے، لیکن اسے مرحلہ وار مشکل سے مشکل ترین بنایا گیا تھا، بچے نے جب ایک ہی گھنٹے میں چار مرحلے پورے کر لیے، تو اس نے سب سےزیادہ پریشان ایجنسی ٹیم کو کیا،کیونکہ ماہرین کے مطابق یہ آسان کوڈ ہرگز نہیں تھا۔

75ویں سالگرہ پر سکے کے دونوں طرف کی تصویر صبح 8 بج کر 45 منٹ پر جاری کی گئی اور عوام سےایک فارم بھرکر کوڈ حل کرنے کا کہا گیا، اور ایک گھنٹے بعد ہی اس کا جواب ایک 14 سالہ لڑکے نےدے دیا اس کا تعلق تسمانیہ سےتھا اوراس نے درست انداز میں چاروں درجے کے کوڈ کا معمہ سلجھالیا تھا خفیہ ایجنسی نے کہا ہےکہ وہ اس لڑکے سے رابطہ کررہی ہے اور اسے ملازمت کی پیشکش کی جائے گی۔

واٹس ایپ شادی شدہ جوڑوں کا رشتہ بچانے میں بھی مددگار ثابت ہوسکتی ہے،تحقیق

Leave a reply