146 جان بچانے والی ادویات کی قیمتوں میں اضافے کا نوٹیفکیشن جاری

حکومت اب ”قومی ضروری ادویات کی فہرست“ میں شامل 464 ادویات کی قیمتوں پر کنٹرول کرے گی
0
133
medicen

اسلام آباد: نگران حکومت نے وفاقی کابینہ کے یکم فروری 2024 کو کیے گئے فیصلے کے مطابق 146 جان بچانے کیلئے ضروری ادویات کی قیمتوں میں اضافے کا نوٹیفکیشن جاری کردیا ہے۔

باغی ٹی وی: وزارت برائے نیشنل ہیلتھ سروسز اینڈ ریگولیشنز کی طرف سے جاری کردہ ایک نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ ڈرگ ایکٹ 1976 کے سیکشن 36 کے ذریعے حاصل کردہ اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے وفاقی حکومت ایسی تمام ادویات اور حیاتیاتی ادویات کو مذکورہ ایکٹ کےسیکشن 12 کےآپریشن سےمستثنیٰ قرار دینے پرخوش ہے جو قومی ضروری ادویات کی تازہ فہرست میں شامل نہیں ہیں۔

یکم فروری 2024 کو، نگراں وزیر اعظم انوارالحق کاکڑ کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کے اجلاس میں وزارت برائے قومی صحت کی سفارش پر اس اقدام کی منظوری دی گئی تھی، سفارش میں عالمی مارکیٹ میں ادویات خام مال کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کے بارے میں آگاہ کیا گیا تھا۔

شادی شدہ افراد زیادہ خوش باش او ر صحت مند ہوتے ہیں یا تنہا زندگی …

وزارت برائے نیشنل ہیلتھ سروسز اور ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی آف پاکستان (DRAP) نے اجلاس کو بتایا کہ شہری فارماسیوٹیکل انڈ سٹری ریگولیٹر کےآن لائن پورٹل کے ذریعےمارکیٹ میں ادویات کی عدم دستیابی کی شکایات درج کرا سکتے ہیں،یہ فیصلہ، ادویات کی قیمتوں میں اضافے کےنوٹیفکیشن کے ذریعے جاری کیا گیاجس میں بنیادی طور پر کینسر، ویکسین، اور اینٹی بائیوٹکس جیسے امراض کے علاج کے لیے ضروری ادویات کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

وزارت صحت کے حکام نے انکشاف کیا ہے کہ یہ اقدام ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کی سفارش کے بعد کیا گیا ہے جس میں 262 ادو یا ت کی قیمتوں میں اضافے کی تجویز دی گئی تھی، تاہم حکومت نے صرف 146 ادویات کے لیے ایڈجسٹمنٹ لاگو کرنے کا انتخاب کیا ہے جو جان بچانے کے لیے ضروری ہیں، قیمتوں میں اضافے کے لیے درج ادویات میں سے، 116 کی قیمتوں میں ایڈجسٹمنٹ فارما سیوٹیکل کمپنیاں خود کریں گی۔

گوگل کے اے آئی ٹول نے مودی کو فاشسٹ قرار دیا

قابل ذکر بات یہ ہے کہ حکومت اب ”قومی ضروری ادویات کی فہرست“ میں شامل 464 ادویات کی قیمتوں پر کنٹرول کرے گی، اور اس بات کو یقینی بنایا جائے گا کہ اہم ادویات عوام تک رسائی میں رہیں۔

حکومت کی جانب سے ادویات کی قیمتوں کو کنٹرول نہ کرنے سے دوا ساز کمپنیوں کو آزادانہ طور پر قیمتیں بڑھانے کی خودمختاری دی گئی ہےیہ اقدام ادویہ سازی کی قیمتوں کی حکمرانی میں ایک مثالی تبدیلی کی نشاندہی کرتا ہےاور ممکنہ طور پر صحت کی دیکھ بھال کی صنعت کی حرکیات کو نئی شکل دیتا ہے ادویات کی قیمتوں میں اضافے کی کابینہ کی منظوری کے بعد ہول سیل اور ریٹیل مارکیٹ میں مختلف ضروری ادویات کی شدید قلت دیکھی گئی ہے۔

ادویات کے تقسیم کاروں اور خوردہ فروشوں کے مطابق مینوفیکچررز وزارت صحت کی جانب سے ادویات کی قیمتوں میں اضافے اور مارکیٹ میں سپلائی جاری نہ کرنے کے باضابطہ نوٹیفکیشن کا انتظار کر رہے تھے۔

سیاسی ومذہبی جماعتیں نفاذ اسلام کے میثاق پر یکجا ہوجائیں،ڈاکٹر سبیل اکرام

Leave a reply