غریبوں کی بھی کوئی زندگی ہے ! 209 ڈیلی ویجز کونوکری سے فارغ کردیا گیا

لاہور:غریبوں کی بھی کوئی زندگی ہے ! 209 ڈیلی ویجز کونوکری سے فارغ کردیا گیا ،اطلاعات کے مطابق یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی میں ڈیلی ویجز پر کام کرنے والے 209 ملازمین فارغ، یونیورسٹی کے 17 ہاسٹلز میں دیہاڑی پر کام کرنے والے ملازمین بے روزگار ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق یونیورسٹی نے ڈیلی ویجز پر کام کرنے والے ملازمین کو ریلیف دینے سے انکار کر دیا ہے۔ یو ای ٹی ٹیچنگ سٹاف ایسوسی ایشن نے ڈیلی ویجز ملازمین کی مالی معاونت کیلئے انتظامیہ کو پلان جمع کرا دیا ہے۔

ٹیچنگ سٹاف ایسوسی ایشن کے صدر ڈاکٹر فہیم گوہر کا کہنا ہے کہ یونیورسٹی کے 690 اساتذہ کی ایک دن کی تنخواہ میں کٹوتی کرکے ملازمین کی معاونت کی جائے، ٹی ایس اے کا کہنا ہے کہ یونیورسٹی میں مذکورہ 209 ملازمین دس سال سے زائد عرصے سے کام کر رہے ہیں۔

صدر ٹی ایس اے ڈاکٹر فہیم گوہر کا کہنا ہے کہ یونیورسٹی کے گرلز اور بوائز ہاسٹلز کا سٹاف ڈیلی ویجز پر تعینات ہے اور جب سے یونیورسٹی بند ہوئی ہے مذکورہ سٹاف کا ذریعہ آمدن بند ہو گیا ہے یونیورسٹی انتظامیہ نے موقف اپنایا ہے کہ مذکورہ ہاسٹلز ملازمین یونیورسٹی کے ملازمین نہیں ہیں یونیورسٹی میں ڈیلی ویجز پر کام کرنے والے ملازمین کو تنخواہیں ادا کی جا رہی ہیں۔

ادھر ذرائع کے مطابق ایک طرف تو نیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی نے ڈیلی ویجز پر کام کرنے والے 209 ملازمین کو فارغ کردیا اور دوسری جانب نیورسٹی نے کورونا ریلیف فنڈ میں 25 لاکھ روپے سے زائد مالیت کا چیک گورنر پنجاب کو پیش کر دیا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.