fbpx

ہتھیار ڈالنے والے 22 افغان کمانڈوز کی موت کا دعویٰ،طالبان کی امریکی میڈیا کے دعوے کی تردید

کابل : امریکی میڈیا نے دعوی کیا ہے کہ افغان طالبان نے ہتھیار ڈالنے والے 22 افغان کمانڈوز کو موت کےگھاٹ اتار دیا تاہم طالبان نے امریکی میڈیا کے اس دعوے کی تردید کی ہے۔

باغی ٹی وی : امریکی میڈیا کا دعویٰ ہے کہ یہ واقعہ 16 جون کو پیش آیا جب افغانستان کے صوبے فاریاب کے ضلع دولت آباد میں طالبان اور افغان فورسز کے درمیان جاری لڑائی میں افغان کمانڈوز کے پاس گولہ بارود ختم ہوگیا کمانڈوز نے گولہ بارود ختم ہونے کی صورت میں طالبان کے آگے سرینڈر کیا، اس کے باوجود طالبان نے افغان فورسز اہلکاروں کو قتل کردیا۔

طالبان نے افغانستان کے مزید 2 اضلاع پر قبضہ کرلیا

دوسری جانب طالبان نے طالبان نے امریکی میڈیا سےگفتگو میں افغان فورسز کے اہلکاروں کو فائرنگ کرکے قتل کرنے کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ یہ حکومت کا جھوٹا پروپیگنڈا ہے تاکہ فورسز کو ہتھیار ڈالنے سے باز رکھا جاسکے البتہ طالبان نے صوبہ فاریاب میں 22 کمانڈوز کو پکڑنے کا دعویٰ کیا ہے۔

افغانستان سے امریکی فوج کا 95 فیصد سے زائد انخلا مکمل ہوگیا امریکی سنٹرل کمانڈ

ایک جانب طالبان امریکی میڈیا کے دعوے کو مسترد کررہے ہیں تو دوسری جانب ہلال احمر بھی 22 افغان کمانڈوز کی لاشیں برآمد ہونے کی تصدیق کررہا ہے۔

خیال رہے کہ امریکی فورسز کے افغانستان سے انخلا کے بعد سے طالبان متعدد اضلاع کا کنٹرول حاصل کرچکے ہیں جب کہ کئی اضلاع میں قبضے کےلیے لڑائی جاری ہے۔

افغانستان کے 26 صوبوں میں حکومتی فورسز اور طالبان میں جھڑپیں جاری

افغان طالبان نے امریکی جرنیلوں سے جم کلب چھین لیا