fbpx

گزشتہ 24 گھنٹوں میں سیلاب کے باعث 18 افراد ہلاک جبکہ 17 زخمی. نیشنل فلڈ رسپانس کوریڈی نیشن سنٹر


گزشتہ 24 گھنٹوں میں سیلاب کے باعث 18 افراد ہلاک جبکہ 17 زخمی

آج ملک کے بیشتر حصوں میں موسم بنیادی طور پر گرم رہے گا جس میں خیبر پختون خواہ اور گلگت میں چند مقامات پرگرج چمک کے ساتھ بارش متوقع ہے۔ 8 ستمبر کو ملک کے بیشتر حصوں میں بنیادی طور پر گرم موسم متوقع ہے جبکہ کےپی کے بالائی علاقوں سمیت مختلف مقامات پر موسم جزوی طور پر ابر آلود رہنے کا امکان بھی ہے۔

نیشنل فلڈ رسپانس کوریڈی نیشن سنٹر کے مطابق: گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران سیلاب کے باعث 18 افراد جان کی بازی ہار گئے جبکہ متاثرین 17 زخمی ہوئے۔ تاہم اب تک مجموعی طور پر 1343 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں اور 12720 زخمی ہو چکے ہیں۔

نیشنل فلڈ رسپانس کوریڈی نیشن سنٹر کا کہنا ہے کہ: اب تک 383 آرمی ایوی ایشن ہیلی کاپٹر مختلف علاقوں میں پھنسے ہوئے لوگوں کو نکالنے کے لیے روانہ کیے جا چکے ہیں۔ گزشتہ 24 گھنٹوں میں 20 اڑان بھری گئی تھی اور 217 پھنسے ہوئے افراد کو نکالا گیا جبکہ 30 ٹن امدادی سامان سیلاب متاثرین تک پہنچایا گیا۔

اعلامیہ کے مطابق: اب تک سندھ، جنوبی پنجاب اور بلوچستان میں 147 ریلیف کیمپس اور سیلاب متاثرین کے لیے امدادی سامان جمع کرنے اور آگے تقسیم کرنے کے لیے ملک بھر میں 278 ریلیف آئٹمز کلیکشن پوائنٹس قائم کیے گئے ہیں۔
علاوہ ازیں عطیات کی مدد میں اب تک 4973 ٹن اشیائے خوردونوش کے ساتھ 925 ٹن غذائی اشیاء اور 2850229 ادویات جمع کی جا چکی ہیں جبکہ 4377.9 ٹن خوراک 887 ٹن غذائی اشیاء اور 2596769 ادویات تقسیم کی جا چکی ہیں۔

علاوہ ازیں گزشتہ دنوں آئی ایس پی آر نے بتایا تھا کہ: پاک فضائیہ نے فضائی پروازیں کرکے 1521 اہلکاروں کو ریسکیو کیا، 2763 خیمے، 106495 کھانے کے پیکٹ، 1161113 کلو گرام راشن، 134486 لیٹر 165 شہروں میں پانی فراہم کیا گیا۔ جبکہ لوگوں کو خوراک، خشک راشن اور طبی امداد فراہم کی گئی ہے۔

پی اے ایف ہیلی کاپٹرز سیلاب سے متاثرہ افراد کو بچانے اور ان علاقوں میں مدد فراہم کرنے میں مصروف عمل ہیں کیونکہ زمینی راستے سے اکثر علاقوں میں مکمل طور پر کٹ گئے ہیں۔ علاوہ ازیں اس وقت پی اے ایف سندھ، نواب شاہ، سکھر، میرپور خاص، تلہار، جیکب آباد، سہون، اور بلوچستان سمنگلی، قلعہ عبداللہ اور قلعہ سیف اللہ۔ پنجاب میں راجن پور اور ڈی جی خان، جی بی، گلگت اسکردو، غذر، نلتر، گانچھے۔ کے پی کے، نوشہرہ، چارسدہ، خاصگی، سیدو شریف، شانگلہ،میں اپنی امدادی و آپریشن کاروائیوں میں مصروف عمل ہے۔
سڑکوں کی مرمتی
ملک کے مختلف حصوں میں سڑکوں اور راستوں کی صورتحال ابھی بھی مسدود ہے N-95 – (بحرین – لائکوٹ – لائیکوٹ – کالام)، N-55 ڈی آئی خان کے قریب پروآ میں ہر قسم کی ٹریفک کے لیے، N-50 سگو میں ہر قسم کی ٹریفک کے لیے وانگو پہاڑیوں کے 24 کلومیٹر حصے میں لینڈ سلائیڈنگ کی وجہ سے پل اور M-8 بند ہے۔