ورلڈ ہیڈر ایڈ

تین بچوں کا اغوا کے بعد قتل، آئی جی پنجاب نے تحقیقاتی کمیٹی بنا دی

آئی جی پنجاب نے چونیاں واقعے پر6رکنی تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دے دی

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق کمیٹی میں ڈی پی او قصور،ایس پی انویسٹی گیشن اورایس پی قدوس شامل ہیں،کمیٹی تین روز میں ابتدائی رپورٹ آئی جی پنجاب کو پیش کرے گی

دوسری جانب چونیاں میں افسوس ناک واقعے پر مرکزی انجمن تاجران نے ہڑتال کااعلان کر دیا،کہا قاتلوں کی گرفتاری تک ہڑتال جاری رہے گی.

واضح رہے کہ چونیاں کے مختلف مقامات سے اغوا3 بچوں کی لاشیں کھنڈرات سے برآمد ہوئی ہیں

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق تینوں بچوں کو زیادتی کے بعد بے دردی سے قتل کیا گیا،پولیس کے مطابق اغواہونے والے3بچوں میں ایک کی لاش اور2کی کھوپڑیاں ملی ہیں،اغوا اورقتل ہونے والوں میں فیضان،علی حسنین اور سلمان شامل ہیں.

گزشتہ رات اغواء ہونے والے 8 سالہ بچے فیضان کی لاش بھی برآمد ہوئی ہے، لاش چونیاں انڈسٹریل اسٹیٹ کی دیوار سے باہر مٹی کے ٹیلے سے ملی .

تین بچوں کی لاشیں ملنے پر علاقہ بھر میں خوف و ہراس پھیل گیا

دو ماہ میں تین بچے لا پتہ ہو گئے تھے جسے پولیس تا حال تلاش نہ کر پائی ،ایک بچہ رات کو اغوا ہوا، اب تین کی لاشیں مل گئی ہیں.بچوں کے اغوا کے واقعات کے خلاف اہلیان علاقہ نے احتجاج کیا تھا اور سڑک بھی بند کی تھی لیکن حکام ٹس سے مس نہ ہوئے،

بچوں کے اغوا کے بڑھتے واقعات سے سکولوں کے طلبا‌ خوف وہراس میں مبتلا ہیں،

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.