fbpx

4 بڑوں کا فیصلہ ہوگیا، عمران خان کیا سوچ رہے ،73 سال میں سب سے بہترین معیشت

4 بڑوں کا فیصلہ ہوگیا، عمران خان کیا سوچ رہے ،73 سال میں سب سے بہترین معیشت

باغی ٹی وی : سینئر اینکر پرسن مبشر لقمان نے کہا ہے کہ چڑیل آج اسلام آباد سے بڑی مخبریاں لے کر آئی ہے . ان کا کہنا تھا کہ آج کل وزیروں کی باتیں‌سننے کا کوئی فائدہ نہیں وہ تو اپوزیشن کی بیشنگ پر لگے ہوئے ہیں‌. کوئی اپنی وزارت بچانے کے چکر میں ہے .

نہ ہی ان کو لوگوں‌کا درد اور خیال ہے . وزیر اعظم سے جو ملتا ہے اس کی بات میں‌کوئی دم ہوتا ہے . اس طرح وزیر اعظم سے ملاقات کرنے والوں نے کہا ہے وزیراعظم نے کہا ہے کہ 73 سال میں معیشت اتنی بہترنہیں ہے جتنی آج ہے . وزیرا عظم نے ایسی بات کیوں کہی ہے یہ تو وہ ہی بتا سکتے ہیں . میں اس بات کو رد نہیں کرتا اور نہ ہی اس کی تائید کرتا ہوں . میں‌ صرف رپورٹ کر رہا ہوں‌کہ انہوں نے جو چند لوگوں سے ملاقات کے دوران بتائی . ان کا خیال ہے کہ ایسا اس لیے ہے کہ کرنٹ اکاؤنٹ ڈیفیسٹ کم ہوا ہے . ان کا خیال ہے کہ جی ڈی پی گروتھ بڑھ رہی ہے جو کہ 3.9 کے حساب سے بڑھ رہی ہے

لیکن ان کے اعداد و شمار پر کوئی اتفاق نہیں کرتا . اسی لیے آئی ایم ایف اس سے اتفاق نہیں کر رہا ہے جب ان کو یہ بتایا گیا کہ عالمی مالیاتی ادارے ان کے فگر سے اتفاق نہیں کر رہے تو ان کا کہنا تھا کہ وہ اپنے ایجنڈا پر کام کر رہے ہیں‌. ہمیں‌ یہ پتہ ہے کہ ہم کہاں کھڑے ہیں اور ہماری معیشت کتنی اچھی ہے .

مبشر لقمان کا کہنا تھا کہ اگرچہ ملکی اور غیر ملکی ماہرین معیشت اس سے اتفاق نہیں کرتے لیکن عمران خان اس پر بضد ہیں‌. اسی طرح ان کے قریبی ساتھیوں نے ان کو مشورہ دیا ہے کہ اگر آپ عثمان بزدار ، اعظم خان اور محمود خان کو اگر تبدیل نہں کریں گے نہ صرف پانچ سال پورے کرنا مشکل ہوجائے بلکہ اگلی دفعہ تو دور دور تک حکومت کرنا مشکل ہو جائے گا. .

مبشر لقمان کا کہنا تھا کہ ایسا نہیں ہوگا کہ آپ کسی کے اوپر سوار ہو کر اس دفعہ بھی حکومت میں آجائیں گے
.
اس پر وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ بالکل نہیں ان تینوں میں کو تو کیا ایک کو بھی ہٹانا نہیں ہے اور یہ سوال ہی پیدا نہیں ہوتا .انکا کہنا تھا کہ کون کون ان کو ہٹانا چاہتا ہے اور کیوں ایسا کہہ رہا ہے .

مبشر لقمان کا کہنا تھا کہ ایسا اس لیے ہے کہ عمران خان اسی لیے کہہ رہے ہیں کہ وہ تصادم کے موڑ میں ہیں‌.اور جو ان کو بتاتا ہے کہ کرپشن ختم کرنے میں ان کو ہٹانا ضروری ہے لیکن وزیر اعظم نہیں مان رہے . جب کہا گیا کہ یہ لوگ آپ کی پارٹی کو ختم کر رہے ہیں اور نقصان پہنچا رہے ہیں.

ان کا کہنا تھا کہ پہلے تو یہ شنید تھا کہ بجٹ کے بعد ان کو شائد تبدیل کردیا جائے لیکن اب یہ خدشہ پیدا ہو چکا ہے کہ ایسا نہ ہوکہ اپنے ہی نئے کینیڈیٹ کے لیے پی ٹی آئی کے لوگ ووٹ نہ دیں اور اس سے بھی جاتے رہیں .