fbpx

نائن الیون کے سازشی نظریات پر یقین رکھتا ہوں آسکر ایوارڈ یافتہ ہالی ووڈ ڈائریکٹراسپائیک لی

نیویارک: ہالی ووڈ کے فلم ڈائریکٹر افسانوی فلمساز ، تجربہ کار اداکار ، پروڈیوسر ، آسکر ایوارڈ یافتہ اسکرین رائٹر اسپائیک لی نے اعتراف کیا ہے کہ وہ نائن الیون کے سازشی نظریات پر یقین رکھتے ہیں۔

باغی ٹی وی : امریکی خبررساں ادارے لاس اینجلس کے مطابق امریکی اخبار یویارک ٹائمز کے ساتھ ایک حالیہ انٹرویو میں ، 2001 میں ہونے والے نائن الیون حملوں اور COVID-19 وبائی امراض کے بارے میں اپنی HBO دستاویزی سیریز "NYC Epicenters 9/11-2021½” پر گفتگو کرتے ہوئے ، لی نے کہا کہ نائن الیون اس نظریے کے تحت ورلڈ ٹریڈ سینٹر کی ایک عمارت کو دہشت گردانہ حملے کے ذریعے نہیں گرایا گیا تھا بلکہ سب کچھ کنٹرولڈ دھماکے کے ذریعے کیا گیا تھا۔

ہالی ووڈ کے فلم ڈائریکٹر اسپائیک لی نے انٹرویو اپنی آٹھ گھنٹے طویل نئی دستاویزی فلم نیویارک ایپیسینٹرز:9/11 پر بھی گفتگو کی۔ چاراقساط پر مشتمل اس دستاویزی فلم کا دو دن قبل ایچ بی او پرپریمیئر ہوا تھا۔

اس دستاویزی فلم میں بنیادی طورپرنیویارک، اس کے رہائشیوں پر گزرے دنوں کی یادیں، نائن الیون کے دہشت گردانہ حملے اور کوویڈ 19 کے وبائی مرض سے پیدا شدہ صورتحال کا تفصیل سے احاطہ کیا گیا ہے۔

فاطمہ بھٹو انجلینا جولی پر برس پڑیں

دستاویزی فلم میں نیو یارک کے سیاستدانوں سمیت شعبہ صحت سے تعلق رکھنے والے کارکنوں، فائر فائٹرز اور دیگر کے انٹرویوز کو بھی شامل کیا گیا ہے لیکن نیویارک پولیس ڈیپارٹمنٹ نے فلم ساز کے خیالات سے آگاہی کے موجب انٹرویو دینے سے اجتناب برتا ہے۔

دستاویزی فلم کے متعلق رپورٹ کے تحت آخری قسط میں ایک ایسے گروپ کے اراکین کے خیالات بھی انٹرویوز کی طرز پر شامل کیے گئے ہیں جو اس بات پر یقین رکھتے ہیں کہ نائن الیون کو ورلڈ ٹریڈ سینٹر کے خاتمے میں امریکی حکومت بھی شامل تھی۔

کویت کا پاکستان کیلئے براہ راست پروازوں کی بحالی کا فیصلہ

جب فلم ڈائریکٹر اسپائیک لی سے صحافیوں نے سوالات کیے تو انہوں نے نہایت اطمینان سے جواب دیا کہ ان کے پاس اس حوالے سے سوالات ہیں انہوں نے اس ضمن میں سرکاری وضاحتوں سے اپنے مطمئن ہونے کے تاثر کی بھی نفی کی۔

فلم ڈائریکٹر کے مطابق انہوں نے فلم میں اپنا نقطہ نظر شامل کیا ہے لیکن فیصلے کا اختیار لوگوں کو دیا ہے کیونکہ وہ ناظرین کے خیالات کا احترام کرتے ہیں فلم سازی کی دنیا میں انہیں چار دہائیاں گزر چکی ہیں انہوں نے دعویٰ کیا کہ وہ لوگوں کا ذہن نہیں بناتے ہیں۔

لوز چینج فلم کے پروڈیوسر ڈیلن ایوری نے بھی ایک مرتبہ کہا تھا کہ ان کے خیال میں عمارت کی تباہی مشکوک ہے کیونکہ اس میں سی آئی اے کا دفتر ، خفیہ سروس کی ایک چوکی ، سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن اور شہر کا ایمرجنسی کمانڈ سینٹر ہے لیکن ریاست ہائے متحدہ کی اسپیشل آپریشنز کمانڈ نے کہا ہے کہ کوئی بھی عمارت میں جگہ کرائے پر لے سکتا ہے۔

واضح رہے کہ اسپائیک لی ٹاپ ڈیموکریٹک ڈونر رہے ہیں اور انہوں نے گزشتہ چند سالوں میں انتہائی بائیں بازو کے سیاستدانوں کے لیے مہم بھی چلائی ہے۔