fbpx

رحیم یار خان: 9 سالہ بچےکا مبینہ زیادتی کے بعد قتل

پنجاب کے شہر رحیم یار خان میں جنسی تشدد کا دل دہلا دینے والا واقعہ سامنے آیا ہے-

باغی ٹی وی: تفصیلات کے مطابق رحیمیار خان میں 9 سالہ بچےکو مبینہ زیادتی کے بعد قتل کردیا گیا ہے پولیس کے مطابق بچے کے لاپتا ہونے کی اطلاع ملی تھی جس کے بعد اس کی ہاتھ پاؤں بندھی لاش قریبی علاقے سے ملی۔

پولیس کا کہنا ہےکہ بچے سے مبینہ طور پر زیادتی کی گئی جس کے الزام میں دو ملزمان کو گرفتار بھی کیا گیا ہے جن سے تفتیش جاری ہے۔

گھریلو ملازمہ کو زیادتی کے بعد قتل کر دیا گیا

قبل ازیں پولیس نے بیٹی سے مبینہ زیادتی کا مرتکب باپ گرفتار کیا تھا پنجاب کے صوبائی دارالحکومت لاہور میں اقبال ٹاؤن پولیس نے کارروائی کی، ملزم عبدالرشید کےخلاف درخواست بچی کی نانی نے دی تھی جس پر پولیس نے درخواست پر فوری کاروائی کرتے ہوئے ملزم عبدالرشید کو گرفتار کر لیا،ایس ایچ او عمران قمرکا کہنا ہے کہ ملزم کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے اور ملزم کو مزید تفتیش کیلئے انوسٹی گیشن ونگ کے حوالے کر دیا گیا ہے-

ساتھی خاتون کو گولی مارنے کا معاملہ: لڑکی 2-3 ماہ سے بنک مینجرکو بلیک میل کر رہی…

بچی کی والدہ نے 04 سال قبل طلاق لے کر دوسری شادی کر لی تھی ملزم عبدالرشید اپنے 02 بچوں 05 سالہ بیٹے رضوان اور14 سالہ بیٹی منزہ کے ہمراہ گھر میں رہتا تھا۔ملزم عرصہ 02 سال سے بچی کو زیادتی کا نشانہ بناتا رہا۔ایس پی اقبال ٹاؤن ڈاکٹر رضا تنویر کا کہنا ہے کہ خواتین اور بچوں کو ہراساں و زیادتی کرنے والے کسی رعایت کے مستحق نہیں-

بد بخت باپ جوئے میں بیٹی ہار گیا

قبل ازیں مرغزار کالونی میں گھریلو ملازمہ کو مبینہ زیادتی کے بعد قتل کیا گیا تھا پولیس نے کاروائی کرتے ہوئے مالک مکا ن کو گرفتارکر لیا تھا سی سی پی او لاہور کا کہنا تھا کہ مکان مالک نے ملازمہ کے اہلخانہ کو اس کی خودکشی کی اطلاع دی اہلخانہ لڑکی کی لاش لیکر پتوکی چلے گئے،گرفتار مکان مالک سے تفتیش جاری ہے پوسٹ مارٹم کے بعد اصل حقائق سامنے لائے جائیں گے، ہنجروال پولیس نے قاسم نامی شخص کو حراست میں لے لیا، سی سی پی او لاہور غلام محمود ڈوگر کے حکم پر تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں، فیصل نامی شخص کو پتوکی پولیس نے حراست میں لے لیا تھا-

دو برس تک بیٹی سے مبینہ زیادتی کا مرتکب باپ گرفتار

دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے لاہور کے علاقے مرغزار کالونی میں زیادتی کے بعدگھریلو ملازمہ کے قتل کے واقعہ کا نوٹس لے لیا اور سی سی پی او لاہور سے رپورٹ طلب کر لی تھی ، وزیراعلیٰ پنجاب نے ملزمان کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کا حکم دیتے ہوئے کہا تھا کہ مقتولہ کے لواحقین کو ہر صورت انصاف فراہم کریں گے۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے غمزدہ خاندان سے دلی ہمدردی و اظہار تعزیت کیا اور متاثرہ خاندان کو انصاف کی فراہمی کی یقین دہانی کروائی تھی-

جناح ہسپتال کا ڈاکٹر گرفتار،نرسز، لیڈی ڈاکٹرز کی پچاس برہنہ ویڈیو برآمد

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!