fbpx

ایک طرف کرونا کی تباہ کاریاں دوسری طرف بچوں کےامتحانات:وزیراعظم کے نام خط لکھ دیا گیا

اسلام آباد:ایک طرف کرونا کی تباہ کاریاں دوسری طرف بچوں کےامتحانات:وزیراعظم کے نام خط لکھ دیا گیا ،اطلاعات کے مطابق پاکستان میں ایک طرف کرونا کی وجہ سے ہرطرف پریشانیوں نے ڈیرے ڈال دیئے ہیں تودوسری طرف حکومت کی طرف سے کیمبرج کے امتحانات کا شیڈول بھی آگیا ہے

کرونا کی تباہ کاریوں کے دوران یہ امتحان کتنا خطرناک ہوسکتا ہے ، اس حوالے سے وزیراعظم عمران خان کوخط لکھ دیا گیا ہے ،یہ خط ڈاکٹرنزہا محمود نے لکھا ہے ، اس خط میں کیا لکھا ملاحظہ فرمائیں

قابل احترام وزیر اعظم عمران خان۔

دین اسلام کی پیروی کرنا حکومت یا کسی بھی دوسری وزارت کے پاس کیا اختیار ہے کہ وہ معصوم بچوں کو وبائی بیماری سے دوچار کرے

جب آپ کی اسمبلی اس صورتحال کی وجہ سے سیشن منسوخ کررہی ہے تو آپ بچوں کو بند ہال میں بیٹھنے پر کیوں مجبور کررہے ہیں !! جہاں موجودہ حالات میں شادیوں کا انعقاد مجرم ہے

جو میرے بیٹے کی زندگی کی ذمہ داری لے رہا ہے ، جبکہ میں مریضوں کے سامنے ان کی حفاظت کے لیے خود کوششیں کررہا ہوں ، کیا مجھے اپنی حکومت کی طرف سے اپنے بچے کو خطرے میں ڈالنے کی اذیت سے نوازا جارہا ہے؟

والدین کی حیثیت سے کوئی بھی امتحانات کی زحمت گوارا نہیں کرتا ہے …. اس کے بجائے ان کی زندگی انمول ہے

میں آپ سے توقع کرتا ہوں کہ آپ کارروائی کریں گے اور ان بچوں کو ان کے زندہ رہنے کا حق دیں گے جیسا کہ سب کو دیا جاتا ہے

کسی ایسے شہری کو مایوس نہ کریں جوکہ فرنٹ لائن فائٹر ہے لیکن وہ بھی کسی کی ضمانت نہیں دے سکتا

شکریہ

ڈاکٹر نزہا محمود

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.