fbpx

پنجاب میں طوفانی بارشوں کی وارننگ جاری کردی گئی

لاہور: صوبہ پنجاب کے مختلف شہروں میں آج سے 16 اگست تک موسلا دھار بارشوں کا امکان ہے، نشیبی علاقے زیر آب آسکتے ہیں۔تفصیلات کے مطابق صوبائی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی نے مزید مون سون بارشوں کا الرٹ جاری کردیا۔

پی ڈی ایم اے کا کہنا ہے کہ مون سون ہوائیں جنوبی علاقوں میں داخل ہو رہی ہیں، آج سے 16 اگست تک پنجاب کے مختلف شہروں میں موسلا دھار بارش کا امکان ہے۔ 18 اگست تک ڈیرہ غازی خان کے برساتی اور مقامی ندی نالوں میں طغیانی کا خدشہ ہے۔

کراچی اورلاہورمیں طوفانی بارشیں جاری

پی ڈی ایم اے کا کہنا ہے کہ 15 اور 16 اگست کے دوران راولپنڈی، سیالکوٹ اور نارووال کے ندی نالوں میں طغیانی کا خدشہ ہے، راولپنڈی، فیصل آباد، لاہور اور گوجرانوالہ میں بھی نشیبی علاقے زیر آب آسکتے ہیں۔

پی ڈی ایم اے کی جانب سے کہا گیا ہے کہ تمام ادارے ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لیے الرٹ رہیں، روزانہ کی بنیاد پر ندی نالوں میں پانی کی سطح کا جائزہ لیا جائے۔

بلوچستان میں طوفانی بارش سے تباہی،اموات میں اضافہ،670 مکانات کو پہنچا نقصان

دوسری طرف بلوچستان میں مون سون بارشوں کی تباہ کاریاں جاری ہیں، جاں بحق افراد کی تعداد 188 ہوگئی۔75 شدید زخمی ہوئے ہیں، 26 اضلاع میں ایمر جنسی نافذ کردی گئی۔جبکہ ایک ہزار معمولی زخمیوں کو ابتدائی طبی امداد دیکر فارغ کر دیا گیا ہے، 40 ہزار گھر مکمل یا جزوی تباہ ہوئے،1 لاکھ کے قریب مویشی پانی میں بہہ گئے ہیں۔

بلوچستان میں طوفانی بارشیں،3 خواتین سمیت 6 افراد جاں بحق ،متعلقہ ادارے الرٹ

سیلاب اور بارشوں سے 25 پل، 5 ڈیموں اور 5 لاکھ ہیکٹر رقبے پر کھڑی فصلوں کو بھی نقصان پہنچا، 26 اضلاع میں ایمرجنسی نافذ کر دی ہے، اب تک متاثرین کو 30 ہزار خوراک کے پیکٹ اور 20 ہزار سے زائد خیمے دئیے جا چکے ہیں۔