آئین پر عمل درآمد نہ ہوا توحکومت کیخلاف توہین عدالت کی کارروائی کریں گے،جسٹس قاضی فائز عیسیٰ

آئین پر عمل درآمد نہ ہوا توحکومت کیخلاف توہین عدالت کی کارروائی کریں گے،جسٹس قاضی فائز عیسیٰ
باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سپریم کورٹ میں خیبرپختونخوا لوکل گورنمنٹ ایکٹ 2013 سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی

دوران سماعت خیبرپختونخوا میں بلدیاتی انتخابات میں تاخیر کا تذکرہ ہوا،عدالت نے اٹارنی جنرل، الیکشن کمیشن اور ایڈووکیٹ جنرل کو نوٹسز جاری کر دیئے،عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ آئین پر عمل درآمد نہ ہوا تو حکومت کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کریں گے.

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ 14ماہ گزرگئے بلدیاتی انتخابات کیوں نہیں کرائے گئے، عوام کے حقوق کی خلاف ورزی نہیں ہونے دیں گے.تیسری دنیا کے ملکوں میں پہلی دنیا کا طرز حکمرانی کیا جا رہا ہے ، صوبائی حکومت کے وکلا کیوں ڈرتے ہیں۔ صوبائی حکومت کے وکلاء حکومت کو بچانے کی کوشس کیوں کر رہے ہیں۔ آپ عوام کے پیسے سے حکومت کرتے ہیں کسی سے ڈرنے کی ضرورت نہیں۔ آپ کی حفاظت کرنے والا اللہ ہے

 

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے ریمارکس دیتے ہوئے مزید کہا کہ ملک میں ہر طرف وی آئی پی کلچر کے تحت روٹ لگے ہوتے ہیں ،کیا ایسی ہوتی ہے ریاست مدینہ؟ ہر طرف مشین گنیں لگی نظر آتی ہیں.کچھ ہوا توکیا یہ گنین عوام پر ہی چلیں گی

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے ریمارکس دیتے ہوئے مزید کہا کہ کشمیر پر الیکشن کرنے کی بات کرتے ہیں لیکن صوبے میں بلدیاتی الکشن نہیں کرواتے ،

قانون آرڈیننس کے ذریعے بنانے ہیں تو پارلیمان کو بند کر دیں،جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کے ریمارکس

جوڈیشل کونسل کے خلاف سپریم کورٹ کا بینچ تحلیل

کسی جج پر ذاتی اعتراض نہ اٹھائیں، جسٹس عمر عطا بندیال کا وکیل سے مکالمہ

ججز کے خلاف ریفرنس، سپریم کورٹ باراحتجاج کے معاملہ پر تقسیم

حکومت نے سپریم کورٹ‌ کے سینئر جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کیخلاف سپریم جوڈیشل کونسل میں ریفرنس دائر کر دیا

حکومت نے یہ کام کیا تو وکلاء 2007 سے بھی بڑی تحریک چلائیں گے،وکلا کی دھمکی

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ بھی میدان میں‌ آگئے، ریفرنس کی خبروں‌ پر صدرمملکت کوخط لکھ کر اہم مطالبہ کر دیا

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ جائیداد کے اصل مالک ہیں یا نہیں؟ اٹارنی جنرل نے سب بتا دیا

صدارتی ریفرنس کیس، جسٹس قاضی فائز عیسیٰ سپریم کورٹ پیش ہو گئے،اہلیہ کے بیان بارے عدالت کو بتا دیا

منافق نہیں، سچ کہتا ہوں، جسٹس قاضی فائز عیسیٰ،آپ نے کورٹ کی کارروائی میں مداخلت کی،جسٹس عمر عطا بندیال

سپریم کورٹ فیصلے کے بعد صدر اور وزیر اعظم کو فورا مستعفی ہوجانا چاہئے، احسن اقبال

اس کیس میں فریق نہیں مگر..جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی اہلیہ سپریم کورٹ پہنچ گئیں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.