fbpx

آج 5 جولائی پیر کے روز یوم سیاہ منایا جائے گا : پیپلزپارٹی

پانچ جولائی 1977 میں پیپلزپارٹی کی منتخب حکومت کا تختہ الٹ کراس وقت کے فوجی آمرجنرل ضیا الحق کی جانب سے مارشل لا لگانے کے خلاف پیپلزپارٹی کے تحت آج 5 جولائی پیرکے روز یوم سیاہ منایا جائے گا۔پانچ جولائی 1977کے دن پیپلزپارٹی کی م*منتخب حکومت کا تختہ الٹ کراس وقت کے وزیراعظم ذوالفقار علی بھٹو کوگرفتارکرلیا گیا۔
ان خیالات کا اظہار پیپلزپارٹی کے رہنماؤں نے اپنے مشترکہ بیان میں کیا ہے ان کا کہنا ہے کہ جن قوتوں نے ذوالفقار علی بھٹو کی منتخب حکومت کا تختہ الٹا وہی ان کے ” عدالتی قتل” میں بھی ملوث تھے۔ پیپلز پارٹی سندھ کے صدرنثارکھوڑو،سیکریٹری جنرل وقارمہدی ، پیپلزپارٹی کراچی ڈویڑن کے صدر صوبائی وزیرسعید غنی ، سیکریٹری جنرل جاوید ناگوری، ڈپٹی سیکریٹری اطلاعات کراچی ڈویڑن ا?صف خان کا کہنا ہے کہ تاریخ میں اس دن کو ہمیشہ سیاہ دن کیطور پر ہی یاد رکھا جائے گا۔
ان کا کہنا ہے کہ 1977 کے مارشل لا کے بعد سیاسی کارکنوں نے اپنی جدوجہد سے پارٹی کو زندہ رکھا، پیپلزپارٹی اس دن کویوم سیاہ کیطور پرمنا کر اپنا احتجاج ریکارڈ کرواتی ہے، پیپلز پارٹی کے رہنما?ں نے یوم سیاہ پر اس عزم کا اعادہ کیا ہے کہ وہ جمہوریت کے بینر کو اٹھائے رکھیں گے جس کے لیے ان کے قائدین ذوالفقار علی بھٹو اور بے نظیر بھٹو سمیت سینکڑوں ورکرز نے اپنی جانوں کی قربانی دی اور جمہوری حکومت کو ہٹا کر آمریت کے نفاذ کی کسی بھی کوشش کی پیپلزپارٹی بھرپور انداز میں مزاحمت کرے گی۔
صوبائی وزیرسعید غنی نے کہا کہ ملکی صورتحال کو دیکھتے ہوئے جمہوری قوتوں کو اکھٹے ملکر قانون کی حکمرانی کو لاحق خطرات کا سامنا کرنا چاہیئے۔ پیپلزپارٹی کراچی ڈویڑن کے ڈپٹی سیکریٹری اطلاعات ا?صف خان کا کہنا ہے کہ جنرل ضیاء نے جموریت کی بساط لپیٹ کر ملک وقوم کے ساتھ بڑی زیادتی کی تھی ،پانچ جولائی 1977کا دن اس بات کا تقاضا کرتا ہے کہ سیاسی جماعتیں مٴْلکی ترقی، عوام کی خوشحالی اور جموریت کی مضبوطی کے لیے مل کر اپنا بھرپور کردار ادا کریں تاکہ آئندہ کسی بھی منتخب حکومت کا تختہ نہ الٹا جا سکے۔