عدالت نے محسن عباس کو بچے کی کفالت کے لئے ماہانہ خرچ ادا کرنے کا حکم دے دیا

فیملی عدالت نے اداکار و گلوکار محسن عباس کو بچے کا ماہانہ خرچہ 50 ہزار روپے ادا کرنے کا حکم دے دیا

باغی ٹی وی : لاہور کی فیملی عدالت میں فاطمہ سہیل اور اداکار و گلوکار محسن عباس کے بچے کا خرچ دینے کی درخواست پر سماعت ہوئی فیملی عدالت کی جج مائرہ حسن نے کیس پر سماعت کی عدالت نے ادکار و گلوکار محسن عباس کو ماہانہ خرچہ ادا کرنے کا حکم دیتے ہوئے بچے کا ماہانہ خرچہ 50 ہزار روپے مقرر کردیا جج مائرہ حسن نے محسن عباس کی سابق اہلیہ فاطمہ سہیل کی درخواست پر حکم جاری کیا

اداکار وگلوکار محسن عباس حیدر کی سابق اہلیہ فاطمہ سہیل نے اپنے سابق شوہرکے خلاف لاہور کی فیملی عدالت میں بچے کا خرچہ دینے کے حوالے سے درخواست دائر کی تھی فاطمہ سہیل نے درخواست میں موقف اختیار کیا تھا کہ سابق شوہر کے تشدد سے تنگ آکر خلع لی بچے کا ماہانہ خرچہ اکیلی برداشت نہیں کرسکتی لہذا عدالت سابق شوہر کو ماہانہ خرچہ ادا کرنے کا حکم دے

حسن عباس حیدر نے سابق اہلیہ کی جانب سے بچے کے اخراجات کے حصول کے لیے دائر مقدمے میں بے روزگاری اور پیسے نہ ہونے کی وجہ سے بچے کی کفالت سے انکار کر دیا تھا

واضح رہے کہ فاطمہ سہیل نے گذشتہ سال اپنے شوہر پر تشدد اور بے وفائی کا الزام لگاتے ہوئے کہا تھا کہ محسن کے نازش نامی ماڈل سے ناجائز تعلقات ہیں جس کی وجہ سے شوہر ان پر تشدد کرتا ہے جب کہ محسن نے فاطمہ کے الزامات کی تردید کرتے ہوئے کہا تھا کہ ان کی اہلیہ جھوٹ بول رہی ہیں

بے روزگار ہوں بچے کا خرچ نہیں اٹھا سکتا اداکار


بعد ازاں فاطمہ سہیل نے لاہور کی فیملی عدالت میں خلع کے لیے مقدمہ دائر کیا تھا اور عدالت نے دونوں کے درمیان علیحدگی کی ڈگری جاری کردی تھی جس کے بعد فاطمہ سہیل نے سابق شوہر سے بچے کے اخراجات لینے کے لیے مقدمہ دائر کیا تھا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.