عدنان سمیع کو پدما شری ایوارڈ ملنے پرسوارا بھاسکرکی شدید تنقید

بھارتی اداکارہ سوارا بھاسکر نے عدنان سمیع کو پدما شری ایوارڈ دینے پر مودی سرکار کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ سابق پاکستانی گلوکار عدنان سمیع کو پدما شری ایوارڈ دینے کا مطلب ہے کہ بی جے پی کو پاکستان سے محبت ہے

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق بھارت میں جاری متنازع شہریت قانون سی اے اے کے خلاف جاری احتجاجی مظاہروں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینے والی بھارتی اداکارہ سوارا بھاسکر نے شہریت متنازع قانون کے خلاف احتجاج کے دوران مودی سرکار کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ بی جے پی کو پاکستان سے محبت ہے اسی وجہ سے انہوں نے سابق پاکستانی گلوکار عدنان سمیع کو پدما شری ایوارڈ سے نواز ا ہے

سوارا بھاسکر نے کہا کہ ایک طرف بی جے پی ہم جیسے لوگوں کو یعنی متنازع شہریت قانون کے خلاف احتجاج کرنے والوں کو گالیاں دیتی ہے ہم پر تشدد کرتی ہے لاٹھی چارج کرتی ہے اور دوسری طرف ایک پاکستانی گلوکار کو پدما شری ایوارڈ سے نوازتی ہے

اداکارہ نے کہا کہ عدنان سمیع نے حکومت کا دل اور ذہن دونوں جیت لیا ہے جب ہی تواس ایوارڈ سے نوازا جا رہا ہے اور ہم سے ہمارا حق چھینا جارہا ہےانہوں نے کہا کہ ہماری حکومت کو ہر طرف صرف پاکستان ہی نظر آتا ہےمودی سرکار نفرت کی سیاست پھیلانے کے علاوہ کچھ نہیں کر رہی

اداکارہ نے بی جے پی کے جنرل سیکریٹری کیلاش وجے ورجیا پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ کیلاش وجےکو بھی اپنی ہندوستانی شہریت کے کاغذات دکھانے چاہئیں کیونکہ وہ تو بنگلادیشی کھانا ’پوہ‘ کھاتے ہوئے بڑے ہوئے ہیں

یاد رہے کہ بھارت میں 71 ویں یوم جمہوریہ کے موقع پر 141 افراد کو مختلف شعبوں میں خدمات سر انجام دینے پر پدما شری ایوارڈ سے نوازا گیا ہے اور ان افراد میں سابق پاکستانی گلوکار عدنان سمیع بھی شامل ہیں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.