ورلڈ ہیڈر ایڈ

قندوز کے بعد افغان طالبان کی پل خمری پر قبضے کی خبریں

کابل : کابل انتظامیہ کے پاس کابل ہی رہ گیا ہے ، اطلاعات کے مطابق افغان طالبان نے شمالی افغانستان کے شہر قندوز کے بعد صوبہ بغلان کے شہر پل خمری پر قبضہ کرلیا ہے ، غیرملکی خبررساں ایجنسی کے مطابق طالبان نے افغانستان کے شمالی صوبے بغلان کے صدر مقام پل خمری پر حملہ کیا جس کے بعد سے افغان سیکیورٹی فورسز اور جنگجوؤں میں جھڑپیں جاری ہیں۔

پل خمری میں حملوں کے نتیجے میں 7 افراد ہلاک اور 43 زخمی ہوئے ہیں جبکہ افغان حکام نے طالبان کا حملہ ناکام بنانے کا دعویٰ کیا ہے۔افغان طالبان کے طرف سے یہ خبریں آرہی ہیں‌کہ کسی بھی وقت وہ پل خمری پر فتح کا پرچم لہرا دیں گے

بھارتی مسلمانوں نے اعلان بغاوت کردیا ، بھارت کا ٹوٹنا یقینی ہوگیا ، ریاست بھوپال میدان جنگ بن گئی

قندوز سے صوبائی کونسل کے چیف صفدر محسنی نے پل خمری کے مضافات میں افغان طالبان سے جھڑپوں کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ شہر میں دھماکوں کی آوازیں سنائی دے رہی ہیں جس کے باعث شہری پریشان اور خوفزدہ ہیں، پل خمری شہر مکمل طور پر بند ہے۔

خیال رہے کہ پل خمری شہر کی آبادی 2 لاکھ 21 ہزار سے زائد آبادی پر مشتمل ہے جو کہ افغان دارالحکومت کابل سے 230 کلومیٹر دور ہے۔دوسری طرف افغان حکومت اور اتحادی اس وجہ سے پریشان ہیں کہ افغان طالبان کی فتح کی رفتار اگر یہی رہی تو کابل ان کی پہنچ سے دور نہیں،

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.