fbpx

افغانستان میں امریکی میراث، بچوں کے کھیلنے کا سامان بن گئی ویڈٰیو وائرل

افغانستان میں امریکی فوج کے انخلاء کے بعد فوجیوں کی چھوڑی گئی میراث بچوں کے کھیلنے کا سامان بن گئی۔

افغان اردو کے ٹوئٹر ہینڈل پر ایک ویڈیو شیئر کی گئی ہے جس میں چند افغان بچوں کو ٹوٹی ہوئی امریکی فوجی گاڑیوں پر جھولتے اور کھیلتے دیکھا جاسکتا ہے۔


ویڈیو میں موجود چند بچے ٹوٹی پھوٹی امریکی فوجی گاڑی میں چڑھے گاڑی کے اندر کھیل رہے ہیں جب کہ چند کو باہر گاڑی کے مختلف حصوں سے کھیلتے دیکھا جاسکتا ہے۔


دوسری جانب افغان اردو کے ٹوئٹر ہینڈل پر ایک ویڈیو شیئر کی گئی جس میں افغان حکومت کے سرینڈر کیے جانے کے بعد مشرقی افغانستان کے شہر خوست میں طالبان کے ہاتھ لگی چند سرکاری فوجی گاڑیاں دیکھی جا سکتی ہیں-


ویڈیوز وائرل ہونے کے بعد صارفین کی جانب سے طالبان کو مختلف مشورے بھی دئیے جا رہے ہیں ایک صارف نے کہا کہ طالبان کو چاہیے کہ ایسی جتنی بھی گاڑیاں ملک بھر میں پڑی ہوئی ہیں ان کو اٹھوا کر ایک جگہ جمع کریں کیونکہ طالبان کے استعمال میں جتنی گاڑیاں ہیں وہ امریکی ہیں اگر کوئی گاڑی خراب ہو گئی تو امریکہ ان کو سپیئر پارٹس نہیں دیگا اس لئے ان ناکارہ گاڑیاں استعمال کریں-

امر اللہ صالح کا پنجشیر کے قریب طالبان کو بھاری نقصان پہنچانے کا دعویٰ

ایک صارف نے کہا کہ ویسے یہ بچے کھیل نہیں رہے یہ اس گاڑی کو کھول رہے ہیں اور پھر کباڑ میں بیچیں گے-

ایک صارف نے کہا کہ سبحان اللہ جب اللہ کسی کا غرور توڑتا ہے تو اس سے بھی بُرا ہوتا ہے جیسے نمرود کو ہر آنے والا چھتر پھیرتا تھا پاک ہے میرا رب آپ ہی سب کچھ کرنیوالا ہے-

خیال رہے کہ طالبان نے 15 اگست 2021 کو افغان دارالحکومت کابل پر بھی قبضہ کرلیا تھا جس کے بعد سابق افغان صدر اشرف غنی سمیت متعدد اہم حکومتی عہدے دار ملک سے فرار ہوگئے-

امید ہے 31 اگست تک افغانستان سے انخلاء مکمل کریں گے امریکی صدر