fbpx

افغانستان میں انڈیا کی شرمناک شکست: بی جے پی کے سینئیر رہنما اپنے ہی نیشنل سیکیورٹی ایڈوائزر کیخلاف پھٹ پڑے

ہندوستان کی جماعت بی جے پی کے نہایت سینئیر رکن اور ہندوستان پارلیمنٹ کے ممبرسبرامنین سوامی افغانستان میں ہندوستان کی شرمناک شکست پر ہندوستان کے نیشنل سیکیورٹی ایڈوائزر اجیت دوول کے خلاف پھٹ پڑے-

باغی ٹی وی : اس حوالے سے وائٹ نیوز کی جرنلسٹ زریاب راجپوت کا کہنا ہے کہ بر سر اقتدار جماعت بھارتی جنتا پارٹی (بی جے پی) کے ممبر اور رہنما سبرامنین سوامی نے امرناتھ یاتریوں پر ہوئے دہشت گرد حملے پر اجیت دیوال کو کٹہرے میں کھڑا کر دیا ہے انہوں نے ٹوئٹر پر ٹوئٹ میں نہ صرف نیشل سیکیورٹی ایڈوائزر اجیت دوول بلکہ رام مادھو پر بھی نشانہ سادھا ہے-

افغانستان صرف افغانیوں کا ہے اور افغانی کسی کا دباؤ برداشت نہیں کریں گے ذبیح اللہ مجاہد

اجیت دوول کے افغان پالیسی کا انحصار اس بات پر تھا کہ امریکہ کبھی افغانستان سے نہیں جائے گا اور طالبان کبھی اقتدار میں نہیں آئیں گے اب اجیت دوول کی اسی احمقانہ سوچ کی وجہ سے ہندوستان کو نہ صرف امریکہ نے صاف دھوکہ دیا بلکہ ہندوستان کا روایتی کئی دہائیوں پُرانا دوست روس بھی پاکستان کے اب زیادہ قریب ہے-

زریاب راجپوت کے مطابق کہانی کچھ اس طرح سے ہوئی کہ ہندوستانی وزیراعظم نریندر مودی کے قریبی سمجھے جانے والے نیشل سیکیورٹی ایڈوائزر اجیت دوول اپنے کرئیر مییں ایک تیسرے درجے کے بیوروکریٹ شمار ہوتے تھے لیکن اپنی چاپلوسیوں اور انتہا پسند ہندو جماعتوں میں اثر و رسوخ کی وجہ سے پہلے انڈین انٹیلی جنس بیوروکریٹ ڈائریکٹر بنے اور پھر انہوں نے اپنی بہادری کے جھوٹے قصے مشہور کر کے نریندر مودی کو اس بات پر آمادہ کرنے پر کامیاب ہوئے کہ اگر مجھے یعنی اجیت دوول کو نیشنل سیکیورٹی ایڈوائزر بنا دیا جائے تو نہ صرف بلوچستان کو پاکستان سے الگ کر دیں گے بلکہ افغانستان کی فوج کی مدد سے خیبر پختونخوا پر بھی قبضہ کر لیں گے اور دو سے تین سال کے اندر اندر اکھنڈ بھارت دنیا کے نقشے پر نمودار ہو جائے گا –

اشرف غنی نے اچانک حکومت چھوڑ کر بڑی غلطی کی ہے سہیل شاہین

واضح رہے کہ اس کے برعکس بھارتی میڈیا پر اس بات کے چرچے رہے کہ افغانستان کے پاس ساڑھے تین لاکھ آرمی اور طالبان کے پاس صرف 70ہزار جنگجو 166 جیٹس اور طالبان کے کوئی جیٹ نییں 5.5 بلین ڈالرز فنڈ افغانستان کے پاس جبکہ طالبان کے پاس فنڈ صرف 1.6 بلین ڈالر اتنا بڑا گیپ ہونے کے باوجود جتنی تیزی سے بجلی سے بھی زیادہ تیزی سے افغانستان میں رفتار پکڑی اس نے سب کو حیران کیا ہے-

اگرچہ اس وقت ایل کے ایڈوانی جیسے بی جے پی کے لیڈروں نے اس ات پر تنقید بھی کی کہ جو شخص اپنی پتلون نہیں سنبھال سکتا وہ ہندوستان کیا سنبھالے گا؟ لیکن اجیت دوول نریندر مودی کی آنکھوں میں دھول جھونکنے میں کامیاب ہو چکا تھا اور اس طرح اجیت دوول نے ایک شاندار افغان پالیسی ترتیب دی جس کا لُب لباب یہ تھا کہ افغانستان میں بے تحا شا پیسہ بہایا جائے گا تاکہ صدیوں سے جن افغانیوں کو ہندوستان کے برہمن لٹیرا ثابت کرتے آئے ہیں ان کے ساتھ دوستی کی جائے اور اپھر اس دوستی کا استعمال کرتے ہوئے افغان فعج اور پاکستان کی جنگ کروائی جائے –

امارت اسلامیہ جلد افغانستان میں اپنی حکومت کا اعلان کرے گی ترجمان طالبان…

اجیت دوول نے ایک بیان میں کہا تھاکہ ان کے فنڈز، نئے جنگجوؤں کی بھرتی اور ہتھیاروں کی سپلائی کو روک دیا جائے اب دہشت گردوں کی سپلائی کا توڑ کیسے کیا جائے اس کا حل یہ ہے کہ دہشت گردوں کو جتنا فنڈ کہیں اور سے مل رہا آپ اس کا ڈیڑھ گنا زیادہ دینا شروع کر دیں یعنی ان کا بجٹ 12 سو کروڑ ہے آپ ان کو اٹھارہ سو کروڑ دینا شروع کر دیں وہ تمام دہشت گرد پھر آپ کی سائیڈ پر ہو جائیں گے کم از کم اس کے بعد وہ آپ پر حملہ نہیں کریں گے یہ لوگ کرائے کے قاتل ہیں آپ کیا لگتا یہ لوگ کوئی عظیم لڑاکو ہیں جو کسی بڑے مقصد کے لئے لڑ رہے ہیں ہر گز نہیں صرف بات اتنی سی ہے کہ ان کو نوکری نہیں ملی اور ان کو کسی نے بھٹکا دیا اپنے مقصد کے لئے-

بات صرف یہیں تک محدود نہیں رہی بلکہ افغانستان نے داعش اور ٹی ٹی پی کو پاکستان کے خلاف دہشت گردی کی کاروائیاں کرنے کے لئے فنڈنگ بھی شروع کر دی ایسے موقع پر اجیت دوول نے پاکستان مخالف دہشت گردوں کو بھاری رقم دینے کے ساتھ ساتھ اپنی جیبیں بھی بھرنا شروع کیں جس پر بھارت کی اپوزیشن سیاسی جماعتوں نے تنقید بھی کی-

پاکستانی طالبان کو افغان طالبان کی بات ماننا ہوگی چاہے اچھی لگے یا بُری ذبیح…

اجیت دوول کی تمام تر احمقانہ سیکیورٹی پالیسیاں ایک ایک کر کے ناکام ہوتی رہیں لیکن اجیت دوول مسلسل میڈیا کی مدد سے خود کو ماسٹر سپائے ثابت کرتا رہا-

بھارتی میڈیا میں چرچا رہی کہ دوول کے آنے سے چین اتنا ڈرا ہوا ہے کہ اس نے یہاں تک کہہ دیا ہے کہ دوکلام پر کوئی بات نہیں ہو گی دوکلام سے ہر ھال میں ہٹنا صرف بھارت کو ہی ہو گا-

حتی کہ 2019 میں اجیت دوول کی ناکام سرجیکل سٹرائیک کی وجہ سے پوری دنیا میں ہندوستان کی جگ ہنسائی ہوئی تب اجیت دوول نے ہندوستان کے سرکاری خزانے سے پیسہ استعمال کرتے ہوئے ایک فلم بنوائی جس میں ایڑھی چوٹی کا ضرور لگا کر خود کو ہندوستانی عوام کا واحد نجات دہندہ ثابت کرنے کی کوشش کی جس میں کہا گیا کہ ایک نیا ہندوستان جو گھر میں گھسے گا بھی مارے گا بھی-

افغان طالبان کے قبضے میں 85 بلین ڈالر مالیت کا امریکی سازو سامان ، جو پاکستان کے…

تاہم وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ نہ تو پاکستان ٹوٹ سکا اور نہ ہی افغانستان کی افغان حکومت ٹوٹ سکی لیکن اجیت اور مودی کی کرپشن کے ظویل قصے میڈیا پر زبان زد عام ہوئے-

یہ بھی سنا کہ ان سب زبانوں کو بند کرنے کے لئے بی جے پی کے سینئیر ترین رہنما ایل کے ایڈوانی کو زبردستی ریٹائرڈ کر دیا گیا جبکہ سبرامنین سوامی کے قتل کا منصوبہ بھی بنایا جا چکا ہے اب سوال یہ ہے کہ ہندوستانی بیوروکریسی کی ایک تھرڈ کلاس بیوروکریٹ نے جس طرح بی جے پی کے صف اول کے رہنماؤں کو کُھڈے لائن لگایا ہے اس سے پتہ یہ چلتا ہے کہ افغانستان میں ہندوستان کی شکست کی بنیاد اسی دن رکھ دی گئی تھی جس دن اجیت دوول کو ہندوستان کا نیشنل سیکیورٹی ایڈوائزر بنایا گیا تھا-

برطانوی سفارتخانے سےاہم دستاویزات طالبان کے ہاتھ لگ گئیں