fbpx

دوحہ ، افغانستان میں پرامن حل سے متعلق چارملکی مذاکرات میں میں کیا ہوئے فیصلے؟

دوحہ ، افغانستان مسئلہ کے پرامن حل سے متعلق چارملکی مذاکرات میں میں کیا ہوئے فیصلے؟

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق دوحہ میں افغانستان مسئلہ کے پرامن حل سے متعلق 4 ملکی مذاکرات ہوئے

مذاکرات میں پاکستان، امریکہ، روس اور چین کے نمائندوں شامل تھے، مذاکرات میں انٹرا افغان مزاکرات کو سپورٹ کرنے پر تبادلہ خیال ہوا ،4 ملکی وفد نے افغان طالبان ٹیم اور قطر کے نمائندوں سے بھی ملاقات کی ،مذاکرات کے بعد مشترکہ بیان میں کہا گیا ہے کہ افغان جنگ کے خاتمہ کے مطالبے کی حمایت کرتے ہیں، افغان مسئلہ کا حل مذاکرات کے ذریعے ہی حل ممکن ہے،امریکی اور نیٹو افواج کی ستمبر تک مکمل انخلا کا فیصلہ نوٹ کیا ہے،انخلا کے دوران امن عمل کو متاثر نہیں ہونا چاہیے،فریقین ملک میں تشدد میں کمی لائیں گے، عوام کے حقوق کا تحفظ کیا جائے گا، سفارتکاروں اور سفارتخانوں کا تحفظ کیا جائے گا،کابل میں کسی غیرملکی سفارتی عملہ پر حملہ کا بھرپور جواب دیا جائے گا،افغانستان میں کسی زبردستی کی حکومت کی حمایت ہرگز نہیں کرتے، افغان طالبان پر اقوام متحدہ کی پابندیوں کا دوبارہ جائزہ لینے کی حمایت کرتے ہیں،دوحہ میں فریقین کے مذاکراتی عمل کی حمایت کرتے ہیں،

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.