fbpx

افسوس ساڑھے چار لاکھ عوام پینے کے پانی سے محروم ہیں

سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر اور پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما حلیم عادل شیخ نے کہا ہے کہ انھوں نے جب سندھ میں پانی چوری کے خلاف مہم چلائی تو ان کے انتخابی حلقے میں ہی پانی بند کروادیا گیا۔

افسوس ساڑھے چار لاکھ عوام پینے کے پانی سے محروم ہیں،اگر پانی نہیں ملا تو ٹینکر مافیا کے سرغنہ وزیراعلیٰ سندھ اور ان کی گینگ کا گھیراؤ کریں گے.

ان خیالات کا اظہار اپوزیشن لیڈر سندھ حلیم عادل شیخ نے ٹنڈوالہ یار میں میڈیا سے گفتگو کے دوران کیا۔حلیم عادل شیخ کا کہنا تھا کہ با اثرلوگوں کو پانی ملتا ہے، یہاں غریبوں کو پانی نہیں ملتا۔

اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی نے کہا کہ میں نے پانی چوری کیخلاف مہم چلائی، تو میرے حلقے میں پانی بند کروادیا گیا۔حلیم عادل کا کہنا تھا کہ ہر 10 سال بعد مردم شماری ہونی چاہیے، سندھ میں مزید تقسیم نہیں چاہتے۔

پی ٹی آئی رہنماء حلیم عادل شیخ بیان میں کہ ‏سندھ حکومت کراچی سمیت پورے سندھ کا پانی بند کرکے یزیدی ٹولے کا کردار ادا کررہی ہے۔

میرے حلقے پی ایس 99 میں پینے کا پانی ناپید ہوچکا ہے، عرصہ دراز سے مختلف گوٹھوں میں ٹیکرز کے ذریعے پانی فراہم کیا جاتا تھا۔

مجھ سے دشمنی تحت ٹینکرز بھی بند کردیے گئے ہیں، ‏اب 50 ہزار لیٹر پانی پی پی اپنے عہدیداروں کو دے رہی ہے۔جو فیکٹریوں کو بیچا جارہا ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.