fbpx

آفتاب سلطان کو چئیرمین نیب تعینات کرنے کی منظوری دے دی گئی

حکومت نے سابق ڈی جی انٹیلی جنس بیورو آفتاب سلطان کو چئیرمین نیب تعینات کرنے کی منظوری دے دی۔

وزیراعظم شہباز شریف کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں مختلف امور پر غور کیا گیا۔ کابینہ نے سابق ڈی جی آئی بی آفتاب سلطان کی بحیثیت چئیرمین نیب تعیناتی کیلئے کابینہ نے منظوری دے دی۔

آفتاب سلطان کی شہرت ایک دیانتدار افسر کے طور پر ہے۔ ان کا نام پیپلز پارٹی نے تجویز کیا تھا۔ آفتاب سلطان آئی جی پنجاب تعینات ، نیشنل پولیس اکیڈمی کے کمانڈنٹ بھی رہ چکے ہیں۔

آفتاب سلطان کے والد اور ساس دو دو مرتبہ رکن قومی اسمبلی رہ چکے ہیں۔ آفتاب سلطان کا تعلق فیصل آباد سے ہے۔ انہوں نے پولیس میں اپنے کیریئر کاآغاز 1977ءمیں بطور اے ایس پی پنجاب پولیس کیا تھا۔

نئے چیئرمین کی تقرری پر صحافی ملک رمضان اسراء نے نے کہا کہ: "نیب ملزم سے نیب چیئرمین بننے کا سفر”


انہوں نے نیب کا ایک مراسلہ شیئر کرتے ہوئے یاد دلایا کہ: نیب کچھ عرصہ پہلے آفتاب سلطان کو میاں نواز شریف کے ساتھ ملزم نامزد کرچکا ہے اور انکوائری کے بعد ان کے خلاف ریفرنس دائر کرنے کی منظوری بھی دے چکا لیکن آج نیب کے ملزم کو چیئرمین نیب لگا دیا گیا.