آہوں ، سسکیوں، آنسوؤں ، بندشوں،کرفیو اور ظلم و جور کی عید…اہل کشمیر کی عید، درد بھری کہانی

آہوں ، سسکیوں، آنسوؤں بندشوں،کرفیو اور ظلم و جور کی عید…اہل کشمیر کی عید، بھارتی ظالم فوج نے کشمیریوں کو بندوق کی نالی اور سنگینوں تلے گزارنے پر مجبورکیا. جبر کے پہرے ہر طرف رہے اور خوف کا سایہ سر پر منڈلاتا رہا….یوں ہی گزری کشمیریوں کی عید…

قابض بھارتی فوج نے بھارت کے زیرانتظام ریاست جموں و کشمیر کے طول عرض بالخصوص سری نگرجیسے مرکزی شہریوں میں مسلسل کرفیو لگا رکھا ہےسوموار کو عیدالاضحیٰ کے موقع پر بھارتی فوج کا کرفیو برقرار رہا۔ کشمیری عوام کے بڑے پیمانے پر مظاہروں سے خائف بزدل بھارتی فوج نے شہریوں کو ان کےگھروں کے اندر محصور کررکھا ہے۔

مقبوضہ کشمیر میں عید الاضحٰی کے موقع پر نہ نماز پڑھی گئی، نہ قربانی ہوئی۔ کشمیریوں نے بڑامذہبی تہوار گھروں میں بند ہو کر گزارا۔ بیوپاری حضرات جانور نہ بکنے پر شدید پریشان نظر آئے، دلی یونیورسٹی میں کشمیری طلباء عید کے روز بھی اپنے گھروں سے دور رہے۔

حریت رہنما سید علی گیلانی، میر واعظ عمر فاروق، سابق کٹھ پتلی رہنما فاروق عبداللہ، عمر عبداللہ، محبوبہ مفتی سمیت گزشتہ ہفتے میں نو سو افراد کو گرفتار کیا جا چکا ہے۔

واضح رہے کہ بھارت کی فوج نے عید سےپہلے ہی کرفیو لگا رکھا ہے اور کشمیریوں کا جینا محال کیا ہوا ہے کشمیری بچے دودھ پینے اور لوگ غزائی قلت کا شکار ہیں. کرفیو اور بے جا ناکہ بندی کا اثر عید الاضحی پر بھی ہوا جس وجہ سے کشمیر عید نماز اور سنت ابراہیمی کی ادائیگی سے محروم رہے ہیں.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.