fbpx

ایک ماں ہے بیوی ہے ، ایک بچہ ہے ریاست ساتھ ہوتی تو در بدر نا پھر رہے ہوتے،عدالت

سپریم کورٹ میں لاپتہ شہری کی بازیابی سے متعلق کیس کی سماعت 2 ہفتے تک ملتوی کر دی گئی

عدالت نے کہا کہ گیارہ مئی 2012 میں درخواست گزار کا شوہر لاپتہ ہوا،درخواست گزار کا کہنا ہے اسکے شوہر کو اٹھایا گیا درخواست گزار سپریم کورٹ سمیت دیگر فورمز سے رجوع کر چکی ہے،سپریم کورٹ 15 مئی 2013 کو معاملہ کمیشن کے سپرد کرکے نمٹا چکی ہے، سیکیورٹی ادارے جوابات میں کہہ چکی ہیں کہ لاپتہ شہری انکی تحویل میں نہیں ہمارے سامنے لاپتہ افراد کمیشن فریق نہیں ہے،ایڈیشنل اٹارنی جنرل لاپتہ افراد کمیشن سے تفصیلات لیکر فراہم کریں، ایڈیشنل اٹارنی جنرل بتائیں لاپتہ افراد کمیشن میں اب تک کیا کارروائی ہوئی؟

قبل ازیں اسلام آ باد ہائیکورٹ میں لاپتہ صحافی کی بازیابی سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی ،اسلام آباد ہائی کورٹ نے وزیراعظم اور وفاقی کابینہ کو متاثرہ فیملی کو سننے کی ہدایت کردی ،عدالت نے کہا کہ ڈپٹی اٹارنی جنرل بتائیں کب وزیراعظم اور کابینہ متاثرہ فیملی کو سن کر مطمئن کریں گے وزیراعظم اور وفاقی کابینہ متاثرہ فیملی کو مطمئن کریں کہ ریاست اس میں شامل نہیں،عدالت نے کہا کہ اگر ڈپٹی اٹارنی جنرل نے پیر تک تاریخ نہ بتائی تو آئندہ سیکریٹری داخلہ پیش ہوں،وفاقی حکومت کی ذ مہ داری ہے کہ شہریوں کی حفاظت یقینی بنائے ،ملک میں جبری گمشدگی کا رجحان موجود ہے ،لاپتہ شہری کی بازیابی بھی یقینی بنانا وفاقی حکومت کی زمہ داری ہے

اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ یہاں کوئی رول آف لاء نہیں یہاں یا تو یہاں جبری گمشدگی نا ہوتی ہو پھر بات کریں، اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے بازیابی درخواست پر سماعت کی ،لاپتہ مدثر نارو کی فیملی کی جانب سے وکیل ایمان مزاری ، عثمان وڑائچ عدالت میں پیش ہوئے وزارت دفاع کا نمائندہ عدالت کے سامنے پیش ہوئے، ڈپٹی اٹارنی جنرل سید طیب شاہ نے کہا کہ دو منٹ اگر مل جائیں تو حقائق سامنے رکھوں گا ،اس کیس کے حقائق مختلف ہیں ،عدالت نے ڈپٹی اٹارنی جنرل کو لاپتہ افراد کمیشن کی رپورٹ پڑھنے کی ہدایت کی، اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے کہا کہ اگر تو جبری گمشدگیاں نا ہو رہی ہوں تو پھر ہم اس طرف نا جائیں لیکن ایسا نہیں ہے، یہ واقعہ کب کا ہے ؟ ڈپٹی اٹارنی جنرل نے عدالت میں بتایا کہ 20 اگست 2018 کا واقعہ ہے،عدالت نے استفسار کیا کہ وزیراعظم اس وقت کون تھا ؟ ڈپٹی اٹارنی جنرل نے عدالت میں کہا کہ وزیراعظم عمران خان ہی تھے اسی روز چارج لیا تھا ،متاثرہ فیملی نے ماہرہ ساجد کیس کی روشنی میں بیان حلفی جمع کرا دیا

اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ایک ماں ہے بیوی ہے اور ایک بچہ ہے ریاست ساتھ ہوتی تو در بدر نا پھر رہے ہوتے، ڈپٹی اٹارنی جنرل سید طیب شاہ نے کہا کہ آدھ منٹ مجھے سن لیں اس کیس میں ڈی پی مانسہرہ کی رپورٹ ہے،یہ دریائے کنہار کے کنارے واک کر رہے تھے،اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ چھوڑ دیں ڈی پی او کو ، چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ڈپٹی اٹارنی جنرل کو بولنے سے روک دیا ،اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ان کی فیملی مطمئن نہیں وزیراعظم اور وفاقی کابینہ کی زمہ داری ہے کہ ان کو مطمئن کرے، مائرہ ساجد کیس کا فیصلہ بھی عدالت کے سامنے پڑھا گیا کمیشن رپورٹ کے مطابق گمشدہ فیملی کا ماننا ہے کہ ریاست اور اس کی ایجنسیز اس میں ملوث ہوں،عدالت نے کیس کی مزید سماعت پیر تک ملتوی کردی

صحافیوں کو ہراساں کرنے کیخلاف ازخود نوٹس کیس،سپریم کورٹ کا بڑا حکم

انڈس نیوز کی بندش، صحافیوں کا ملک ریاض کے گھر کے باہر دھرنا

تنخواہوں کی ادائیگی کے لئے ملک ریاض کو کہا جائے،آپ نیوز کے ملازمین کا جنرل ر عاصم سلیم باجوہ کو خط

پنجاب پولیس نے ملک ریاض فیملی کے آگے گھٹنے ٹیک دئیے، حسان نیازی

جب تک قانون کے مطابق سخت سزا نہیں دی جائے گی، قوم کرنل کی بیوی اور ٹھیکیدار کی بیٹی جیسے ٹرینڈ بناتی رہے گی۔ اقرار

ملک ریاض کے باپ سے پیسے لے کر نہیں کھاتا، کوئی آسمان سے نہیں اترا کہ بات نا کی جائے، اینکر عمران خان

صحافیوں کے خلاف کچھ ہوا تو سپریم کورٹ دیوار بن جائے گی، سپریم کورٹ

صحافیوں کا کام بھی صحافت کرنا ہے سیاست کرنا نہیں،سپریم کورٹ میں صحافیوں کا یوٹرن

مجھے صرف ایک ہی گانا آتا ہے، وہ ہے ووٹ کو عزت دو،کیپٹن ر صفدر

پولیس جرائم کی نشاندہی کرنے والے صحافیوں کے خلاف مقدمے درج کرنے میں مصروف

بیوی، ساس اورسالی کی تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل کرنے کے الزام میں گرفتارملزم نے کی ضمانت کی درخواست دائر

سپریم کورٹ کا سوشل میڈیا اور یوٹیوب پر قابل اعتراض مواد کا نوٹس،ہمارے خاندانوں کو نہیں بخشا جاتا،جسٹس قاضی امین

‏ سوشل میڈیا پر وزیر اعظم کے خلاف غصے کا اظہار کرنے پر بزرگ شہری گرفتار

صحافیوں کا دھرنا،حکومتی اتحادی جماعت بھی صحافیوں کے ساتھ، بلاول کا دبنگ اعلان

سوشل میڈیا چیٹ سے روکنے پر بیوی نے کیا خلع کا دعویٰ دائر، شوہر نے بھی لگایا گھناؤنا الزام

میں نے صدر عارف علوی کا انٹرویو کیا، ان سے میرا جھوٹا افیئر بنا دیا گیا،غریدہ فاروقی

صحافیوں کے خلاف مقدمات، شیریں مزاری میدان میں آ گئیں، بڑا اعلان کر دیا

سپریم کورٹ نے صحافی مطیع اللہ جان کے اغوا کا نوٹس لے لیا

کسی کی اتنی ہمت کیسے ہوگئی کہ وہ پولیس کی وردیوں میں آکر بندہ اٹھا لے،اسلام آباد ہائیکورٹ

پریس کلب پر اخباری مالکان کا قبضہ، کارکن صحافیوں نے پریس کلب سیل کروا دیا

صحافیوں کو کرونا ویکسین پروگرام کے پہلے مرحلے میں شامل کیا جائے، کے یو جے

کیوں ان صحافیوں کے پیچھے پڑ گئے جو حکومت یا کسی اور کے خلاف رائے دے رہے ہیں،عدالت

مینار پاکستان واقعہ کے ملزم پکڑے جاسکتے تو صحافیوں کے کیوں نہیں؟ سپریم کورٹ

مقامی صحافیوں کو کان پکڑوا کر تشدد کروانے والا ملزم گرفتار

حکومت بتائے صحافیوں کے حقوق تحفظ کے لیے کیا اقدامات اٹھائے؟ عدالت