ایک اور امریکی جنگی بحری بیڑے میں 64 امریکی فوجی کرونا کا ہوئے شکار

ایک اور امریکی جنگی بحری بیڑے میں 64 امریکی فوجی کرونا کا ہوئے شکار

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق ایک اور امریکی جنگی جہاز میں 64 امریکی فوجیوں میں کرونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے

امریکہ کی کیلیفورنیا میں سان ڈیاگو بحری اڈے میں جنگی جہاز یو ایس ایس کڈ پر تعینات 64 امریکی فوجیوں میں کرونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے،واشنگٹن کے اخبار ڈیلی ہیرالڈ کے مطابق جنگی جہاز پر عملے کے 300 اراکین ہیں اور ان سب کے ٹیسٹ کروائے گئے ہیں جن میں اسے 63 کے کرونا ٹیسٹ مثبت آئے

امریکی بحریہ کا کہنا ہے کہ جہاز کو سان ڈیاگو میں سینیٹائز اور صاف کیا جا رہا ہے جبکہ عملہ ارکان کو آئیسولیشن اور قرنطینہ مرکز میں منتقل کر دیا گیا ہے

امریکہ کا یہ دوسرا جنگی جہاز ہے جو کرونا وائرس سے متاثر ہوا ہے جبکہ طیارہ بردار جنگی جہاز یو ایس ایس تھیوڈور روزویلٹ سمندر میں تعینات ہے۔ كڈ جنگی جہاز مشرقی الکاہل میں بڑھتی ہوئی اسمگلنگ روکنے کے لئے حال ہی میں تعینات کیا گیا تھا

امریکی بحری بیڑے یو ایس ایس کڈ میں تعینات 18 اہلکار کورونا کے مریض بن چکے ہیں جبکہ کورونا کیسز میں مزید اضافے کا خدشہ ہے۔ اس سے قبل تیوڈور روزویلٹ نامی نیو کلیئر ہتھیار سے لیس امریکی بحری بیڑے کے عملے میں 550 سے زائد افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق ہو چکی ہے۔ جس میں پانچ ہزار افراد سوار ہیں

جہاز کے کپتان نے فوری مدد کے لیے پینٹاگون کو خط لکھا تھا. امریکی نشریاتی ادارے کے مطابق بحری بیڑے کے کپتان بریٹ کروزیئر نے چار صفحات پر مشتمل ایک خط میں پینٹاگون کو آگاہ کیا کہ بحرالکاہل کے ایک امریکی علاقے گوام میں ان کا بیڑا موجود ہے اور کرونا وائرس بیڑے پر تیزی سے پھیل رہا ہے جس کے باعث چار ہزار اہلکاروں کے متاثر ہونے کا خدشہ ہے.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.