کرونا نے نیوزی لینڈ کو تباہی کے دہانے پرپہنچا دیا ، ائیرنیوزی لینڈ نے ایک ہزارسے زائد ملازمین کی چھُٹّی کروادی

نیوزی لینڈ:کرونا نے نیوزی لینڈ کو تباہی کے دہانے پرپہنچا دیا ، ائیرنیوزی لینڈ نے ایک ہزارسے زائد ملازمین کی چھُٹّی کروادی،باغی ٹی وی کےمطابق کرونا وائرس نے جہاں غریب اورترقی پزیرممالک کی کمرتوڑکررکھ دی ہے وہاں نیوزی لینڈ جیسے ترقی یافتہ ملک کو بھی تباہی کے دہانے پرلاکھڑاکیا ہے

ذرائع کےمطابق ویسے تونیوزی لینڈ کا ہرشعبہ ہی بہت متاثرہوا ہےتاہم دنیا بھرمیں سب سے بہترین اورکامیاب سمجھی جانے والی نیوزی لینڈ ایئرلائنزکوبہت ہی زیادہ نقصان پہنچایا ہے، تازہ ترین اطلاعات کےمطابق ابتدائی طورپرنیوزی لینڈ ائیرلائنز نے ابھی 777 بوئنگ کے عملے کوپہلے مرحلے میں نوکریوں سے نکالنے کا اعلان کیا ہے

 

ذرائع کے مطابق ان ملازمین کی تعداد ایک ہزار سے زائد ہے ، دوسری طرف ملازمین بھی پریشان ہیں کہ وہ اس مشکل وقت میں کدھرجائیں گے ،یہ بھی کہا جارہا ہے کہ ہوسکتا ہےکہ نیوزی لینڈ جیسے ملک میں بھی بے روزگاری کے خلاف احتجاجوں کاسلسلہ شروع ہوجائے

ادھر ذرائع کا کہنا ہےکہ اس سے پہلے بھی نیوزی لینڈائیرلائنزبوئنگ 777 کے بہت سے عملے کو سرپلس کرنے کے حوالے سے بھی بات چل رہی ہے،دوسری طرف ائیرلائنز حکام کا کہنا ہے کہ اگرحالات مزید خراب نہ ہوئے تو تب اگلے سال اپریل میں 777 بوئنگ کی سروس بحال ہوسکتی ہیں ، لٰہذا تب تک اس کی ساری کی ساری سرگرمیاں معطل کی جاتی ہین

ذرائع کا کہنا ہے کہ دوسری طرف نیوزی لینڈائئرلاینزکو 900 ملین ڈالرز کی رقم درکار ہے اپنی بقیہ جزوی سرگرمیوں کو چلانے کےلیے لیکن اب مسئلہ ہے کہ وہ کہاں سے یہ پیدا کریں ،جبکہ 30 فیصد ائرلائنز پہلے ہی اپنا وجود کھو چکی ہے ،

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.