fbpx

امریکہ کی 20ریاستوں نے جوبائیڈن کے خلاف مقدمہ درج کرا دیا

واشنگٹن: امریکہ کی 20ریاستوں نے جوبائیڈن انتظامیہ کے خلاف مقدمہ درج کرا دیا۔

باغی ٹی وی : غیر ملکی خبر رساں ادارے میل آن لائن کے مطابق ریاستوں کی طرف سے یہ مقدمہ ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کی طرف سے خواجہ سرا طالب علموں کو طالبات کے کھیلوں کے مقابلوں میں حصہ لینے کی اجازت دینے کے فیصلے کے خلاف درج کرایا گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق سب سے پہلے ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کے اس فیصلے کو ریاست ٹینیسی کے اٹارنی جنرل ہربرٹ سلیٹرے نے عدالت میں چیلنج کیا۔اس کے بعد باقی 19ریاستوں کے اٹارنی جنرل بھی اس مقدمے میں فریق بن گئے۔

چین کا افغانستان میں جنگی جرائم کی تحقیقات کا مطالبہ

اس مقدمے میں ’ایکوئل امپلائمنٹ اپرچونٹی کمیشن‘ (Equal employment opportunity comission)کو بھی فریق بنایا گیا ہے اور اس ادارے پربھی ہم جنس پرستوں اور خواجہ سراﺅں کے ساتھ امتیازی سلوک روا رکھنے کا الزام عائد کیا گیا ہے۔

اس مقدمے میں عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ طلبہ و طالبات کی طرح خواجہ سراﺅں کے کھیلوں کے الگ مقابلے منعقد کیے جانے چاہئیں۔ سکولوں میں ان کے لیے الگ باتھ روم اور الگ لاکر روم ہونے چاہئیں۔ اسی طرح کام کی جگہوں پر بھی خواجہ سراﺅں کے ساتھ برابری کا سلوک کیا جانا چاہیے، نہ کہ انہیں خواتین کی کیٹیگری میں ضم کر دیا جائے-

پیرس حکومت طالبان سے مذاکرات کررہی یا نہیں؟ فرانسیسی وزیر خارجہ نے بتا دیا