امریکہ میں کورونا کے مریضوں کے لیے آزمائشی طور پر دی گئی دوائی نے اثر دکھا دیا

امریکہ میں کرونا کے مریضوں کے لیے آزمائشی طور پر دی گئی دوائی نے اثر دکھا دیا

باغی ٹی وی :امریکہ میں آزمائشی طور پر کورونا وائرس کے مریضوں کو دوائی دی گئی اس طرح‌ انہیں اتنا افاقہ ہوا کہ ایک دن میں وینٹیلیٹر کے محتاج نہ رہے . ا.15 این ایچ ایس مراکز میں منشیات سے متعلق اعضاء کی جانچ پڑتال اور تحقیق کی جارہی ہے اور اس کے نتائج ہفتوں میں متوقع ہیںِ

ایک امریکی منشیات کمپنی نے گذشتہ روز انکشاف کیا ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ یہ عالمی منڈیوں کے لیے رضا کارانہ طورپر کام کرتی ہے ، این ایچ ایس کے اسپتالوں میں 100 سے زیادہ شدید مریضوں کو تجرباتی کوویڈ 19 کا علاج کرایا گیا ہے۔

جیوڈ سائنسز کے حصص میں نیویارک میں اضافے کے بعد ایک سائنس دان کی فوٹیج لیک ہونے کے بعد یہ بتایا گیا ہے کہ مریضوں کو اس کے اینٹی ویرل منشیات سے متعلق علاج کے بعد علاج کرانے کے بعد تیزی سے بازیافت کی جا رہی ہے۔

شکاگو یونیورسٹی میں منشیات کے مقدمے کی نگرانی کرنے والی ڈاکٹر کیتھلین ملانے نے بتایا کہ کچھ شدید بیمار مریضوں نے اتنی تیزی سے صحت یاب ہو لی ہے کہ 24 گھنٹوں میں وینٹیلیٹروں کو اتار دیا گیا تھا۔ زیادہ تر کو دس دن کے علاج معالجے کے مکمل کورس کی ضرورت نہیں تھی۔ 125 مریضوں میں سے صرف دو ہی دم توڑ چکے تھے۔

واضح رہےکہ کرونا وائرس کے لیے ابھی تک دوا نہیں بنائی جاسکی اور ایسی کاوشیں ابتدائی مراحل میں‌ ہے.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.