fbpx

امریکی خفیہ ادارے کے رزا فاش کرنے والے ایڈورڈ اسنوڈن کو روس نے شہریت دے دی

ماسکو: روسی صدر پیوٹن نے امریکی خفیہ ادارے نیشنل سیکورٹی ایجنسی (این ایس اے) کے راز دنیا کے سامنے افشا کرنے والے سابق کنٹریکٹر ایڈورڈ اسنوڈن کو روس کی شہریت دے دی۔

باغی ٹی وی: غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق صدر پیوٹن نے اسنوڈن کو روس کی شہریت دینے کے کاغذات پر دستخط کردیئے ہیں ایڈورڈ اسنوڈن امریکی خفیہ ادارے نیشنل سیکورٹی ایجنسی میں ٹیکنیکل اسسٹنٹ تھے، اس سے قبل وہ سی آئی اے میں بھی کام کرچکے تھے-

لندن میں نواز شریف کے سیکرٹری پر نامعلوم افرادکا چاقو سے حملہ

اسنوڈن 2013 میں امریکی حکومت کی جانب سے دنیا بھر میں فون اور انٹرنیٹ کے ذریعے نگرانی کے پروگرام کی معلومات دنیا کے سامنے لائے تھے جس نے دنیا بھر میں تہلکہ مچادیا تھا اور امریکی حکومت کو کافی تنقید اور خفت کا بھی سامنا کرنا پڑا تھا۔

امریکی خفیہ ادارےکے اہم راز افشا کرنےکے بعد اسنوڈن نے امریکا چھوڑ دیا تھا اور روس میں پناہ حاصل کرلی تھی، اب 9 سال بعد انہیں روس کی شہریت دے دی گئی ہے۔

39 سالہ اسنوڈن امریکی حکومت کو 9 سال سے مطلوب ہیں ، امریکا میں ان کے خلاف غداری کے الزامات میں مقدمہ درج ہے 2020 میں روس نے اسنوڈن کو مستقل رہائش کا اجازت نامہ دے دیا تھا جس نے ان پر روسی شہریت کے حصول کا درواز ہ کھول دیا تھا۔

روسی صدر اور روس کی خفیہ ایجنسی کے جی بی کے سابق افسر پیوٹن نے 2017 میں ایک بیان میں کہا تھا کہ اسنوڈن نے امریکی خفیہ راز افشا کرکے غلط کیا تاہم انہوں نے غداری نہیں کی۔

دوران پرواز مسافرنے فلائٹ اٹینڈنٹ پر حملہ کر دیا

وہ ہمارے والدین سے برسوں کی علیحدگی کے بعد، میں بیوی اور میں اپنے بیٹوں سے الگ ہونے کی کوئی خواہش نہیں رکھتا دو سال کے انتظار اور تقریباً دس سال کی جلاوطنی کے بعد، تھوڑا سا استحکام میرے خاندان کے لیے فرق ڈالے گا۔ میں ان کے لیے اور ہم سب کے لیے رازداری کی دعا کرتا ہوں،‘‘ سنوڈن نے پیر کو ٹویٹ کیا۔

امریکی حکام برسوں سے چاہتے ہیں کہ سنوڈن کو جاسوسی کے الزام میں فوجداری مقدمے کا سامنا کرنے کے لیے امریکہ واپس بھیج دیا جائے۔

محکمہ خارجہ کے ترجمان نیڈ پرائس نے پیر کو کہا کہ امریکہ ایڈورڈ سنوڈن کی امریکی شہریت کی حیثیت میں کسی تبدیلی سے آگاہ نہیں ہے ہمارا موقف تبدیل نہیں ہوا ہے۔ مسٹر سنوڈن کو امریکہ واپس آنا چاہئے جہاں انہیں کسی دوسرے امریکی شہری کی طرح انصاف کا سامنا کرنا چاہئے۔

انہوں نے کہا کہ صرف ایک چیز جو بدلی ہے وہ یہ ہے کہ اس کی روسی شہریت کے نتیجے میں، بظاہر اب اسے یوکرین میں ایک لاپرواہ جنگ میں لڑنے کے لیے بھرتی کیا جا سکتا ہے۔

روس، سکول میں گولیاں چل گئیں، 13 افراد کی ہوئی موت