fbpx

فورٹ منرو میں امریکن خاتون سے زیادتی یا کچھ اور… ؟

ڈیرہ غازیخان:فورٹ منرو میں امریکن خاتون سے زیادتی یاکچھ اور ؟
باغی ٹی وی رپورٹ۔پنجاب پولیس اور بی ایم پی سوتی رہی اور امریکی خاتون پاکستانی نوجوانوں کو دادعیش دیتی رہی اور ٹک ٹاک بناتی رہی جبکہ ڈیرہ غازی خان میں کسی بھی غیر ملکی کے داخلے پر پابندی عائد ہونے کے باوجود امریکی خاتون کیسے ملزمان کے ساتھ گھومتی پھرتی اور لسانی تنظیم کے لوگوں سے ملاقاتیں اورغازی خان کے مقبرہ اور ٹریفک چوک پر بنائی گی تصویریں اور پھر فورٹ منرو تک پہنچ گئی۔

دو اہم چیک پوسٹیں سخی سرور چیک پوسٹ اور غازی گھاٹ چیک پوسٹ کیسے کراس کرکے وہاں ملزمان کے ساتھ گھومتی پھرتی رہی ان ہی چیک پوسٹوں پر مقامی لوگوں اور پاکستانی شہریوں کو روک کر تو بہت تنگ اور خوار کیا جاتا ہے ایک غیر ملکی خاتون کیسے آتی جاتی رہی؟

اور سب سے بہت اہم ایک اور بی ایم پی چیک پوسٹ تھانہ راکھی گاج جسے کراس کیے بغیر آپ فورٹ منرو نہیں پہنچ سکتے وہاں سے بھی یہ لوگ کیسے گزر گئے؟ کمانڈنٹ بی ایم پی اکرام ملک نے ایک نااہل دفعدر کو کسی اہم شخصیت کی سفارش کو ترجیع دے کر تعینات کر رکھا ہے حافظ یوسف کی دو ماہ میں کوئی کار کردگی نہیں ہے صرف اور صرف پنجاب سے بلوچستان کھاد کی سمگلنگ کی کاروائی کی گئی ہے وہ بھی محکمہ فوڈ کے اہلکاروں کی نشاندہی پر پکڑے ذرائع کے مطابق اعلی حکام تحقیقات کریں چیک پوسٹوں کے انچارجوں و اہلکاروں نے انھیں کیسے گزرنے دیا مبینہ مک مکا کیا یا غفلت کا ارتکاب کیا ان کے خلاف محکمانہ کارروائی عمل میں لائی جائے یاد رہے

گزشتہ دن اکیس سالہ غیر ملکی لڑکی کے ساتھ فورٹ منرو میں زیادتی ہوئی جس ، کمانڈنٹ بارڈر ملٹری پولیس کا فوری نوٹس ملزم گرفتار۔ ہوے ۔ڈی جی خان میں غیر ملکیوں کا داخلہ ممنوں ہے ایک اربیلا راجن پور، جام پور ڈی جی خان ہرنڈ، کوہ سلیمان ٹرائبل ایریا فورٹ منرو میں کئی روز تک ملزمان کے ساتھ گھومتی رہی کسی ادارے نے پوچھنا تک گواراہ نہ کیا۔

یاد رہے گزشتہ روز یہ خبر سامنے آئی تھی کہ ڈیرہ غازی خان کے صحت افزاء مقام فورٹ منرو میں امریکی نیشنلٹی خاتون کے ساتھ مبینہ زیادتی کا واقعہ خاتون کی درخواست پر زیادتی کرنے والا نوجوان گرفتار بارڈر ملٹری پولیس کے تھانہ فورٹ منرو نے ایف آئی آر درج کرلی۔ امریکی خاتون اربیلا راجنپور کے رہائشی مزمل شہزاد نامی نوجوان جوکہ ٹور گائیڈ بتایا جاتا ہے کے ساتھ سیر کے لیے فورٹ منرو آئی وہ کراچی سے راجنپور آئی اور وہاں سے ڈیرہ غازی خان پھر فورٹ منرو پہنچی ۔ دونوں نے فورٹ منرو کے انمول ہوٹل میں رہائش رکھی۔ ارابیلا نے درخواست میں موقف اختیار کیا ہے کہ مزمل شہزاد نے اپنے ساتھیوں کی مدد سے اس کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا ہے۔ ارابیلا نے درخواست میں یہ بھی موقف اختیار کیا ہے کہ اذان نامی نوجوان کے ساتھ بھی اس کی ویڈیو ریکارڈ کی گئی ہے اور اس کے فیملی ممبران سے بھی رابطہ کیا گیا۔ وہ مجھے بلیک میل کرچکا ہے اور بھاری رقم کا بھی تقاضا کیا گیا۔ مزمل شہزاد پر بھی الزام عائد کیا کہ اس نے جنسی زیادتی کی اور فوٹو ،ویڈیو بھی بنائیں جن کو وائرل کی گئیں ۔