fbpx

امریکی پولیس کے تشدد سے سیاہ فام خاتون ہلاک

واشنگٹن: امریکی پولیس کے تشدد سے ایک اور سیاہ فام خاتون ہلاک ہو گئیں۔

باغی ٹی وی: غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق “بلیک لائیوز میٹرز” کی شریک بانی خاتون امریکی پولیس کی جانب سے گرفتاری کے دوران ہلاک ہو گئیں جس نے موت نے ریاستہائے متحدہ میں ہنگامہ برپا کر دیا ہے امریکی پولیس نے مذکورہ خاتون کو گرفتاری کے دوران “ٹیزر” نامی آلے سے بار بار کرنٹ لگایا جس سے وہ ہلاک ہو گئیں۔

امریکہ ترکیہ کو ایف 16 لڑاکا طیارے بیچنے پر تیار

وہ مجھے جارج فلائیڈ کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ وہ مجھے جارج فلائیڈ کرنے کی کوشش کر رہے ہیں،” 31 سالہ اینڈرسن کو پولیس باڈی کیمرہ فوٹیج میں 2020 میں فلائیڈ کے پولیس قتل کے حوالے سے یہ کہتے سنا جا سکتا ہے جس نے دنیا بھر میں بڑے پیمانے پر نسلی انصاف کے مظاہروں کو جنم دیا۔

پولیس کی گرفتاری کے دوران خاتون نے مزاحمت کی کوشش کی تو اہلکار نے خاتون کو کرنٹ نما آلہ لگایا جس کی تکلیف سے خاتون نے مزاحمت ختم کردی اور پولیس کو کرنٹ لگانے سے منع کرتی رہی۔ اس دوران خاتون مدد کے لیے بھی چلاتی رہی خاتون کی جانب سے مزاحمت ختم کرنے کے باوجود پولیس اسے کرنٹ لگاتی رہی جس کے باعث خاتون ہلاک ہو گئی۔

واضح رہے کہ “بلیک لائیوز میٹرز” نامی تنظم سیاہ فام امریکیوں پر ہونے والے مظالم کے خلاف بنائی گئی ہے۔