fbpx

جنگلات کی بحالی کیلئے مربوط پالیسی مرتب کی جائے، وزیر اعظم۔

وزیراعظم عمران خان نے ہدایت کی ہے کہ غیر قانونی شکار اور درختوں کی کٹائی کی روک تھام کیلئے منظم اقدامات کئے جائیں ، جنگلات کی بحالی کیلئے مربوط پالیسی مرتب کی جائے اور جدید ٹیکنالوجی کو بروئے کار لایا جائے۔ وہ جمعرات کو صوبہ پنجاب میں جنگلات کے تحفظ اور بحالی کے حوالے سے منعقدہ اجلاس کی صدارت کر رہے تھے۔
اجلاس میں معاون خصوصی برائے ماحولیاتی تبدیلی ملک امین اسلم، وزیر برائے جنگلات پنجاب سبطین خان و دیگر نے بھی شرکت کی۔ اجلاس میں وزیرِ اعظم عمران خان کو چھانگا مانگا و دیگر جنگلات کی بحالی کے حوالے سے اٹھائے جانے والے اقدامات پر بریفنگ دی گئی۔ گذشتہ چند سالوں میں چھانگا مانگا کے اڑھائی ہزار ایکٹر رقبے کو درختوں سے محروم کرکے بنجر بنا دیا گیا۔
وزیراعظم کو بریفنگ میں بتایا گیا کہ موجودہ دورِ حکومت میں 10بلین ٹری سونامی مہم میں ایک ہزار ایکڑ رقبے پر شجر کاری کا عمل مکمل کیا جا چکا ہے، اڑھائی ہزار ایکڑ رقبے پر سال 2023تک یہ عمل مکمل کر لیا جائے گا۔ وزیراعظم نے کہا کہ ماحولیاتی آلودگی کے اثرات کم کرنے کے حوالے سے جنگلات اور شجرکاری کلیدی اہمیت کی حامل ہے اورجنگلات کا تحفظ و بحالی موجودہ حکومت کی ترجیحات کا حصہ ہیں۔
وزیراعظم نے ہدایت کی کہ جنگلات کے تحفظ و بحالی کے لئے ٹیکنالوجی کو بروئے کار لایا جائےاور صوبہ بھر میں جنگلات کی بحالی کے لئے مربوط پالیسی مرتب کرکے پیش کی جائے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.