ٹھٹھہ : ایک اور نعش برآمد،رواں ہفتے ملنے والی نعشوں کی تعداد 5 ہوگئی

ٹھٹھہ،باغی ٹی وی( نامہ نگار راجہ قریشی)ایک اور نعش برآمد،رواں ہفتے ملنے والی نعشوں کی تعداد 5 ہوگئی
تفصیلات کے مطابق ٹھٹھہ کا ہیڈ کواٹر مکلی منشیات فروشی، ڈکیتی اور خون ریزی کا گڑھ بن چکا ہے ، آج پہر ایک نوجوان کی لاش برآمد ہوئی ہے ، ٹھٹھہ پولیس میں من پسند اور نااہل آفیسر تعنیات ہیں جن کی وجہ سے حالات کنٹرول سے باہر ہوچکے ہیں ،آج جو لاش ملی ہے اس کے متعلق بتایاگیا ہے کہ مکلی ناریجہ گوٹھہ کارہائشی نوجوان رکشا ڈرائیور 24 سالہ وقار علی جس کو سر میں گولیاں مارکرقتل کیا اورلاش کے ساتھ پولیس کو پسٹل ملا جو پولیس نے اپنی تحویل میں لےلیا ہے ،مکلی پولیس نے لاش کو پوسٹ مارٹم کے لۓ سول ہسپتال ٹھٹھہ منتقل کردیا ہے ، پولیس نے تحقیقات کاآغاز کردیاہے ،یاد رہے رواں ہفتے ٹھٹھہ کے مختلف علاقوں سے ملنے والی نعشوں کی تعداد 5 ہوگئی ہے جو کہ ٹھٹھہ پولیس کی نا اہلی کاواضح ثبوت ہے ،ٹھٹھہ پولیس کی کرپشن اور رشوت ستانی کے باعث چوریاں، پرچی جواء ، منشیات فروشی عروج پر ہے جس کی وجہ سے قتل و غارت عام ہوتی جارہی ہے جبکہ ایس ایس پی ٹھٹھہ کارروائیاں کرانے کی بجائے خاموش تماشائی کاکردار ادا کررہاہے ،ستم تو یہ ہے کہ چوروں ڈاکوؤں سے میڈیا نمائندگان بھی محفوظ نہیں رہے آئے روزجن کے موبائل فون اور موٹر سائیکل چوری یاڈکیتی ہورہے ہیں لیکن ایس ایس پی ٹھٹھہ پولیس سے صحافیوں کے موبائل فونزاور موٹرسائیکلز ریکور نہیں کراسکے،عام آدمی کے قاتلوں اور مجرمان کوکیسے ٹریس کرکے انہیں گرفتار کرکے انصاف کے کٹہرے مں کھڑاکریں گے ،عوامی و سماجی اور مذہبی حلقوں نے وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ اور آئی جی سندھ سے فوری نوٹس لینے کامطالبہ کیا ہے
.

Leave a reply