fbpx

آپ اپنے تیر چلائیں میری ڈھال میرا قرآن ہے رابی پیرزادہ کا ناقدین کو جواب

سابق اداکارہ رابی پیر زادہ نے خود پر تنقید کرنے والی خاتون کو کرارا جواب دے دیا-

باغی ٹی وی : ابی پیرزادہ نے مذہبی تعلیمات کے مطابق زندگی گزارنے کے لئے شوبز کو خیرباد کہنے کے بعد پینٹنگ و آرٹ ورک کا کام شروع کیا تھا اور وہ سوشل میڈیا پر اپنے آرٹ ورک کی تصاویر و ویڈیوز شیئر کرتی رہتی ہیں جبکہ وہ گلوکاری کے بعد نعت و حمد بھی پیش کرتی دکھائی دیں اور انہوں نے قرآن پاک لکھنے کاکام شروع کر دیا ہے۔

رابی پیرزادہ نے دیگر لوگوں کے ہمراہ ’چھوٹی سی بات‘ نامی ایک ویب سائٹ پر بھی متعارف کرائی تھی بعد ازاں رابی نے اپنے نام سے ہی فلاحی تنظیم بھی متعارف کرائی تھی، جس کے تحت وہ غریب خاندانوں اور خواتین کی مدد کرتی ہیں۔

رابی پیرزادہ نے جنوری 2021 میں فاؤنڈیشن کا آغاز کیا، جس کے تحت اب تک 2 ہزار سے زائد خاندانوں کی مدد کی جا چکی ہے، جبکہ 60 سے زائد خواتین کو مالی طور پر بااختیار بھی بنایا گیا ہے۔

رابی پیرزادہ کی جانب سے فاؤنڈیشن کے آغاز کے بعد ’حیا بائے رابی‘ کے نام سے ’عبایہ‘ برانڈ بھی متعارف کرایا گیا، جس کے تحت مختلف رنگوں اور ڈیزائن کے نہ صرف پاکستانی بلکہ مشرق وسطی انداز کے دیدہ زیب و فیشن ایبل ’عبایہ‘ اور ’حجاب‘ تحت تسبیح اور جائے نماز (مصلہ) سمیت دیگر چیزیں بھی فروخت کے لیے پیش کی جاتی ہیں-

شوبز کو خیر باد کہنے کے بعد سابق اداکارہ کی مذہبی سرگرمیوں پر جہاں کچھ لوگوں کی جانب سے ان کی حوصلہ افزائی کی جاتی ہے وہیں کچھ لوگ تنقید کا نشانہ بھی بناتے رہتے ہیں اور اس کو دکھاوا اور ایکٹنگ قرار دیتے ہیں جس پر رابی پیر زادی بھی خاموش نہیں رہتیں اور ان کو تنقید کے جواب میں اخلاق کے دائرے میں رہتے ہوئے جواب دیتی ہیں-

تاہم اب بھی سوشل میڈیا پر فائزہ شیخ نامی خاتون نے رابی کی نعت ریکارڈ کراتے ہوئے تصویر شئیر کی اور کہا کہ طارق جمیل کے بعد اسلام سے سب سے زیادہ فائدہ اس لڑکی نے اٹھایا ہے-

رابی پیر زادہ نے اس خاتون صارف کی پوسٹ اپنے انسٹاگرام پر شئیر کرتے ہوئے جواب دیا-

رابی پیرزادہ نے سوالیہ انداز میں لکھا کہ فائدہ؟ –

انہوں نے وضاحت کرتے ہوئے لکھا کہ شوبز میں میرا پروڈکشن ہاؤس تھا، کروڑوں کے ڈرامے اور پروگرام بنا کر بیچے، ہر ہفتہ اور اتوار کنسرٹ کے 5 سے 10 لاکھ، ٹی وی پر تنخواہ 4 سے 7 لاکھ، جس پروگرام میں گیسٹ جانا ایک لاکھ روپےلینا، کم سے کم ماہانہ آمدنی پچیس لاکھ تھی-

رابی پیر زادہ نے لکھا کہ ان کی وہ پچیش تیس لاکھ آمدنی سب میری ایک کیلیگرافی کے بیس ہزار پر قربان-

انہوں نے کہا کہ آپ مجھے طعنے دے کر واپس نہیں بھیج سکتے مگر شائد ایسی باتیں کرکے اللہ کو ناراض کرتے ہیں-

انہوں نے کہا کہ میری جگہ کوئی بھی ہوتی وہ یہ سوچ کر شوبز میں واپس جاتی کہ کم از کم وہاں طعنے نہیں پیسہ شہرت اور پروٹوکول ہے، مگر میرے لیے میرا اللہ اور اسکے وہ لوگ جو میرا ساتھ دیتے ہیں کافی ہیں، آپ اپنے تیر چلائیں میری ڈھال میرا قرآن ہے، الحمداللہ-

رابی پیرزادہ نے ’حیا بائے رابی‘ کے نام سے اپنا ’عبایہ‘ برانڈ متعارف کرادیا

رابی پیر زادہ نے قرآن پاک لکھنے کاکام شروع کر دیا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.