ممالک اسرائیل سے اپنے شہریوں کو نکالنے کے لیے کوشاں

0
93
ghaaa

اسرائیل اور حماس کے مابین لڑائی کو آج چوتھا دن ہے، چار دنوں میں دونوں اطراف سے اموات ہوئی ہیں، اسرائیل کی جانب سے غزہ پر حملے جاری ہیں تو وہیں حماس کی جانب سے بھی کاروائی جاری ہے، اسرائیل کے 1000 کے قریب شہری حماس کے حملوں میں ہلاک ہو چکے ہیں، وہیں اسرائیلی حملوں میں سات سو کے قریب افراد شہید ہو چکے ہیں،

اسرائیل نے اپنی سرحد پر تین لاکھ فوج تعینات کر دی ہے اور شہریوں کو اپنے گھروں میں رہنے کی ہدایت کی ہے، اسرائیل کے مسلسل فضائی حملوں کے نتیجے میں غزہ میں ہزاروں لوگ پہلے ہی بے گھر ہو چکے ہیں جو کھلے آسمان تلے رہ رہے ہیں،

اسرائیل کی مصر کے راستے غزہ جانے والے ٹرک پر بمباری کی دھمکی
اسرائیل نے مصر کے راستے غزہ جانے والے ٹرک پر بمباری کی دھمکی دی ہے۔ اسرائیل نے مصر کو دھمکی دی ہے کہ وہ امداد لے جانے والے کسی بھی ٹرک پر حملہ کرے گا جو رفح کراسنگ سے غزہ میں داخل ہونے کی کوشش کرے گا۔غزہ کی پٹی میں وزارت داخلہ اور قومی سلامتی نے کہا کہ اسرائیلی فوج نے مصر کے ساتھ رفح زمینی سرحدی گزرگاہ پر دوبارہ بمباری کی،بم دھماکے کے نتیجے میں کراسنگ کے دو ملازمین زخمی ہوگئے۔رفح لینڈ کراسنگ غزہ کی پٹی کو مصر سے جوڑتی ہے،یہ ہفتے میں دو دن بند ہوتی ہے،

کئی ممالک اسرائیل سے اپنے شہریوں کو نکالنے کے لیے کوشاں
جیسے جیسے حماس اور اسرائیل کی لڑائی میں اضافہ ہو رہا ہے، کئی ممالک اپنے شہریوں کو اسرائیل سے نکالنے کی تیاری کر رہے ہیں،اس ڈر سے کہ یہ لڑائی طویل چلے گی،ہالینڈ،آسٹریا،قبرص،چین،تھائی لینڈ،جاپان،ارجنٹان کوشش کر رہے ہیں کہ شہریوں کو محفوظ بنانے کے لئے اسرائیل سے نکالا جائے،ہالینڈ کا کہنا ہے کہ حکومت اپنے شہریوں کو اسرائیل سے واپس نکالنے کے لئے کوشش کر رہی ہے، آسٹریا کل بدھ کو فوجی ٹرانسپورٹ طیارے کے ذریعے اپنے شہریوں کو اسرائیل سے نکالنے کا انتظام کر رہا ہے۔ تقریباً 200 آسٹریا ن کے باشندوںے اب تک اپنے ملک کے حکام کو اسرائیل چھوڑنے کی خواہش سے آگاہ کیا ہے۔قبرصی وزارت خارجہ نے اعلان کیا کہ حماس کے اچانک حملے کے بعد اسرائیل چھوڑنے کے خواہشمند تیسرے ملک کے شہریوں کے انخلاء میں مدد کے لیے ملک تیار ہے۔

چینی وزارت خارجہ نے وضاحت کی کہ بیجنگ اسرائیل میں جاری تنازع میں دو چینی شہریوں کی ہلاکت کے بارے میں معلومات کی تصدیق کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔وزارت کے ترجمان وانگ وین بِن نے یہ بیانات غزہ کی پٹی کی سرحد کے قریب سڈروٹ میں دو چینی کارکنوں کی ہلاکت کا اشارہ دینے والی رپورٹ کے جواب میں دیے۔

تھائی لینڈ کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ تازہ دستیاب اعداد و شمار کے مطابق اسرائیل میں بدامنی میں 18 تھائی شہری مارے گئے۔ 3,226 تھائی اسرائیل سے واپس آنا چاہتے ہیں۔جاپانی کابینہ کے سیکرٹری جنرل نے اشارہ دیا کہ اسرائیل میں کسی جاپانی کے زخمی ہونے کی ابھی تک کوئی اطلاع نہیں ہے۔ارجنٹائن کے وزیر خارجہ سانتیاگو کیفیرو نے کہا کہ حماس کے عسکریت پسندوں کی طرف سے شروع کیے گئے حملوں میں سات ارجنٹائن مارے گئے، جب کہ 15 دیگر اب بھی لاپتہ ہیں۔ تقریباً 625 شہریوں نے بھی ارجنٹائن واپس جانے کی درخواست کی۔

اسرائیلی میجر جنرل حماس کے ہاتھوں یرغمال؛ کیا اب فلسطینی قیدی چھڑوائے …

 پرتشدد کارروائیوں کو فوری طور پر روکنے اور شہریوں کے تحفظ کا مطالبہ 

اسرائیلی میجر جنرل حماس کے ہاتھوں یرغمال؛ کیا اب فلسطینی قیدی چھڑوائے جاسکیں گے؟

اسرائیل پر حملہ کی اصل کہانی مبشر لقمان کی زبانی

پاکستانی سیاسی جماعت کاجمعہ کو یوم احتجاج کے طور پر منانے کا اعلان
پاکستان مرکزی مسلم لیگ اسلام آباد کے رہنماؤں نے اسرائیلی جارحیت کا شکار فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی اور اسرائیلی مظالم کے خلاف 13 اکتوبر جمعۃ المبارک کو یوم احتجاج کے طور پر منانے کا اعلان کیا ہے اس سلسلے میں مرکزی احتجاجی مظاہرہ جمعۃ المبارک کو سہ پہر 04 بجے نیشنل پریس کلب کے باہر کیا جائے گا جس میں شہر بھر سے پاکستان مرکزی مسلم لیگ کے کارکنان و ذیلی تنظیمات کے علاوہ مختلف شعبہ ہائے زندگی سے وابسطہ شہریوں کی بڑی تعداد شریک ہوگی۔منگل کو ضلعی سنٹرل کمیٹی کے اجلاس سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان مرکزی مسلم لیگ اسلام آبا د کے ضلعی صدر چوہدری شفیق الرحمان وڑائچ،انعام الرحمان،یاسر عرفات بٹ،محمد شوکت سلفی،رانا زاہد مقبول،میڈیاکوآرڈنیٹر نوید احمد ودیگر کا کہنا تھا کہ مسئلہ فلسطین پر پاکستان مرکزی مسلم لیگ کا وہی مؤقف ہے جو مؤقف بانی پاکستان محمد علی جناح کاہے،مرکزی مسلم لیگ فلسطینیوں کی جدوجہد کی مکمل حمایت اور اسرائیل کو ایک ناجائز ریاست تصور کرتی ہے،اسرائیل بدترین جنگی جرائم کی مرتکب ایک ناجائز ریاست ہے اقوام عالم کو چاہئے کو وہ مظلوم فلسطینیوں کی مدد کیلئے اپنا کردار ادا کریں،حکومت پاکستان مظلوم فلسطینیوں کیلئے عالمی سطح پر آواز بلند کرے،اسرائیلی مظالم کے خلاف فلسطینیوں کی جانب سے حالیہ مزاحمت فطری عمل ہے،اقوام عالم فلسطینیوں کو ان کا حق دلانے کیلئے اپنا کردار ادے کرے۔ ضلعی صدر مرکزی مسلم لیگ اسلام آباد چوہدری شفیق الرحمان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان مرکزی مسلم لیگ جمعۃ المبارک کو اسلام آباد بھر میں یوم یکجہتی فلسطین کے طور پر منائے گی علماء ومشائخ ونگ پاکستان مرکزی مسلم لیگ اسلام آبادکی اپیل پر جمعۃ المبارک کو علماء اکرام اپنے خطبات جمعہ میں اسرائیلی جارحیت کی مذمت کریں گے جبکہ خطبہ جمعہ کے بعد اسرائیلی بربریت کے خلاف احتجاجی مظاہرے کئے جائیں گے بڑا احتجاجی مظاہرہ جمعۃ المبارک کے بعد سہ پہر 04 بجے نیشنل پریس کلب اسلا م آباد کے باہر ہو گا جس میں شہر بھر سے کارکنان و عام شہریوں کی بڑی تعداد شریک ہوگی۔

بھارتی اداکارہ نصرت اسرائیل سے پہنچیں ممبئی،بتایا آنکھوں دیکھا حال
حماس نے اسرائیل پر حملہ کیا تو بھارتی اداکارہ نصرت بھروچا اسرائیل میں تھیں، وہ 39 ویں انٹرنیشنل فلم فیسٹول میں شرکت کے لئے اسرائیل گئی تھیں جہان انکی فلم کی بھی نمائش ہونی تھی، نصرت سے انکی ٹیم کا رابطہ منقطع ہو گیا تھا تا ہم وہ ممبئی پہنچ چکی ہیں، واپس گھر پہنچنے پر نصرت نے ویڈیو پیغام جاری کیا اور کہا کہ بھارتی حکومت کا شکریہ ادا کرتی ہوں،نصرت کا کہنا تھا کہ میں واپس آ گئی اور گھر میں محفوظ ہوں، دو دن قبل ہوٹل میں جب اٹھی تو ہر طرف دھماکوں کی آوازیں تھیں، سائرن بج رہے تھے، ہمیں ہوٹل کے نیچے ایک تہہ خانے میں لے جایا گیا،آج جب میں گھر میں اٹھی اور کوئی شور نہیں تھا تو میں نے خود کو پرسکون پایا اور محفوظ پایا، اب میں اچھا محسوس کر رہی ہوں، مجھے جلد امن کی امید ہے، نصرت نے بھارتی سفارتخانے کی مدد پر بھی شکریہ ادا کیا،

حماس کے 1500 عسکریت پسندوں کی لاشیں اسرائیل سے برآمد
اسرائیلی فوج کا کہنا ہے کہ اس نے اسرائیل کے اندر حماس کے تقریبا 1500 عسکریت پسندوں کی لاشیں برآمد کی ہیں،
اسرائیل نے غزہ کا "مکمل محاصرہ” کرنے کا اعلان کر رکھا ہے، اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ محاصرہ بین الاقوامی قانون کے تحت "ممنوع” ہے اور "انسانی ہمدردی کی راہداری” کے قیام کا مطالبہ کیا ہے۔اسرائیل نے اب غزہ کی خوراک، ایندھن، ادویات اور دیگر سپلائی بند کر دی ہے، جبکہ حماس کے زیر اقتدار علاقے پر جوابی فضائی حملے شروع کر دیے ہیں،

یورپی یونین نے تشدد کے خاتمے اور تمام فریقوں سے شہریوں کے تحفظ کا مطالبہ کیا ہے۔تو وہیں واشنگٹن نے اسرائیل کی پشت پناہی کے لیے جنگی وفوجی سازوسامان بھیجنے کا وعدہ کیا ہے اور ایک طیارہ بردار بحری جہاز مشرقی بحیرہ روم میں تعینات کیا ہے۔ایران نے حماس کے حملے کی تعریف کی ہے تا ہم اس میں ملوث ہونے یا کوئی کردار ادا کرنے سے انکار کیا ہے،

Leave a reply