دوستوں کی پارٹی میں جب افطار کیلئے شراب کے سوا کچھ نا ملا تو مجبوراً ، انیس سالہ لڑکی کا عالم دین سے سوال

لندن :دوستوں کی پارٹی میں جب افطار کیلئے شراب کے سوا کچھ نا ملا تو مجبوراً ، انیس سالہ لڑکی کا عالم دین سے سوال ،اطلاعات کے مطابق سوشل میڈیا پرپچھلے سال کی ایک ویڈیووائرل ہوئی جس میں ایک لڑکی کے حوالے سے بہت اہم گفتگو ہے

اس ویڈیومیں ایک نوجوان عالم دین بتاتے ہیں کہ مجھے ایک لڑکی کا پیغام موصول ہوا ہےکہ میں روزےکی حالت میں افطارکے لیے اپنے دوستوں کے پاس جاتی ہوں‌تومجھے مجبورآ شراب پینی پڑی ، مجھے یہ بات بے چین کررہی ہے ، مجھے بتایا جائے کہ میرا اب کیا بنے گا

اس سوال کے جواب میں مفتی کا کہنا تھا کہ جو ہوگیا سو ہوگیا ، آپ اللہ سے توبہ کریں اوربرے دوستوں کی محفل چھوڑ کرنیک لوگوں کی مجلس اختیارکریں اورنماز اورقرآن پڑھیں ، اللہ معاف کرنے والے ہیں، ، اس مفتی کا کہنا تھا کہ جب اسنے یہ پیغام سنا تو وہ خود ہل کررہ گئے مگرشریعت اسلامی میں ایسے حالات میں کیسے آگے بڑھنا ہے بہترین حل موجود ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.