fbpx

دہشتگردوں کی پاک افغان بارڈر عبور کرنے کی کوشش، فائرنگ، دو جوان شہید

راولپنڈی:خیبرپختونخوا کے ضلع کرم میں دہشتگردوں نے پاک افغان بارڈر عبور کرنے کی کوشش کی اس دوران سکیورٹی فورسز اور دہشتگردوں کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ ہوا اور پاک فوج کے دو جوان شہید ہو گئے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی طرف سے جاری کردہ بیان کے مطابق خیبرپختونخوا کے ضلع کرم میں افغانستان سے دہشتگردوں کی پاکستان میں داخلے کی کوشش ہوئی، بارڈر پار کرنے کی یہ کوشش 26 اور 27 فروری کی درمیانی رات کی گئی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق سیکورٹی فورسز نے فوری اور مؤثر رد عمل دیتے ہوئے دہشت گردوں کی پاکستان میں گھسنے کی کوشش ناکام بنا دی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق اس دوران سکیورٹی فورسز اور دہشتگردوں کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ ہوا، فائرنگ کے باعث دو جوان شہید ہو گئے، شہید ہونے والوں میں لانس نائیک اسد اور سپاہی آصف شہید شامل ہیں۔ لانس نائیک اسد کا تعلق ضلع کرم اور سپاہی آصف کا تعلق ضلع لکی مروت سے ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق پاک فوج اپنے سرحدوں کی دفاع کےلیے پرعزم ہے۔ دہشتگردی کا جڑ سے خاتمہ یقینی بنایاجائےگا، ہمارے جوانوں کی قربانیاں ہمارے عزم کو مزید تقویت دیتی ہے۔

اس سے قبل پاکستان نے عبوری افغان حکومت سے پاکستان مخالف سرگرمیاں روکنے کا مطالبہ کیا ہے۔

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!