نوازشریف شرم سے پانی پانی ہوگئے:پاکستانی میڈیا میں خبررکوانے کے لیے کوششیں بھی ناکام:مریم اورحسن پرپھٹ پڑے

0
82

لندن :نوازشریف شرم سے پانی پانی ہوگئے:پاکستانی میڈیا میں خبررکوانے کے لیے کوششیں بھی ناکام:مریم اورحسن پرپھٹ پڑے ،اطلاعات کے مطابق لندن میں حسن نواز کے ڈرامے کے فلاپ ہونے کے بعد شریف فیملی شرم سے پانی پانی ہوگئی ہے ، ادھر یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ حسن نواز کے اس ڈرامے میں ناکامی پر نوازشریف سخت نالاں اورحسن کو بے وقوف ماسٹرمائنڈ قراردیا ہے

یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ لندن کے ساتھ ساتھ لاہور میں بھی ن لیکی رہنما اس ڈرامے کے فلاپ ہونے پربہت زیادہ شرمسار ہیں اورلندن پولیس کی رپورٹ کو پاکستانی میڈیا میں شائع ہونے سے روکنے کےلیے بڑے سرگرم رہے لیکن پھربھی یہ خبر بریک ہوگئی

یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ اس بہت بڑی خفت اورناکامی پرنوازشریف حسن نواز اورمریم نواز پربہت زیادہ برہم ہیں ، لیگی ذرائع کے مطابق نوازشریف نے حسن نواز کوغلط پلاننگ کرنے پرچھڑکا ہے اورآئندہ کسی بھی ایسے کام سے پہلے مشاورت کرنے کا حکم دیا ہے،

دوسری طرف یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ نوازشریف نے اس معاملے کوسوشل میڈیا پربھی آنے سے روکنے کےلیے ہدایات جاری کردی ہیں

یاد رہے کہ ن لیگ کی طرف سے حسن نواز کے دفتر میں حملے کے من گھڑت الزامات کے بعد سکاٹ لینڈ یارڈ پولیس کا موقف بھی سامنے آگیا ہے۔برطانوی پولیس نے دفتر پر حملے کی تردید کردی ہے۔

ذرائع کے مطابق لندن پولیس چیف شریف فمیلی کی سیاسی چال پرپھٹ پڑے اوربہت ہی سخت ریمارکس دیتے ہوئے کہ یہ برطانیہ ہےپاکستان نہیں:یہاں بےوقوف نہیں بنایاجاسکتا:حسن نوازکےدفترپرحملہ ڈرامہ تھا

سکاٹ لینڈ یارڈ پولیس کہتے ہیں کہ مذکورہ واقعہ جمعرات کو پیش آیا جب کہ ن لیگ نے گزشتہ روز جمعہ کو اس کی اطلاع دی۔

سکاٹ لینڈ یارڈ پولیس چیف کا کہنا ہے کہ حسن نواز کے دفتر آنے والے چاروں افراد غیر مسلح تھے،جبکہ شریف فیملی نے جھوٹ بولا اوردنیا کویہ باورکرایا کہ دفتر آنےوالے مسلح لوگ تھے اورحملہ کرنا چاہتے تھے

جائے وقوعہ پر حملہ ہوا اور نہ ہی کوئی تشدد کا واقعہ پیش آیا۔واقعے کی چوبیس گھنٹے بعد ویڈیوز سامنے لانے سے سوال اٹھ گئے ہیں کہ کیا آیا ویڈیو ایڈیٹ کر کے میڈیا کو جاری کی گئی۔کیونکہ ویڈیوز میں لیگی رہنما مبینہ حملہ آوروں کو اطمینان سے جانے کا مشورہ دے رہے ہیں۔

ویڈیوز میں دیکھا جا سکتا ہے کہ مبینہ حملہ آوروں کے ہاتھوں میں کسی قسم کے اسلحہ کی بجائے کاغذات تھے۔مبینہ حملہ آور بھی جلدی میں نہیں تھے،

گفتگو کر کے اپنی گاڑی میں واپس چلے گئے جبکہ لیگی رہنماؤں نے مقامی پولیس کو بھی خصوصی طور پر دیے گئے ہنگامی نمبر پر بروقت کال کرکے واقعے کی اطلاع نہیں دی تھی۔

خیال رہے کہ گذشتہ روز بتایا گیا کہ قائد مسلم لیگ ن اورسابق وزیراعظم محمد نوازشریف کے صاحبزادے حسن نواز کے لندن دفتر میں نامعلوم افراد نے داخل ہونے کی کوشش کی،اس موقع پر اسحاق ڈار اور عابد شیر علی بھی دفتر میں موجود تھے،حسن نواز کے دفتر آنے والے افراد نے نوازشریف گارڈز کے ساتھ بحث وتکرار بھی کی۔

Leave a reply