ورلڈ ہیڈر ایڈ

اگست میں کاروں کی فروخت میں 41فیصد کمی…. بھارت کے حوالے سے اہم رپورٹ آ گئی

بھارت کی آٹوموبائل کی انڈسٹری میں چھائی مندی کی وجہ سے اگست میں مسافر کاروں کی فروخت گزشتہ سال کے اسی ماہ کے مقابلہ میں 41.1 فیصد کی بھاری کمی سے ایک لاکھ 15 ہزار یونٹ رہ گئی۔
ایک اور آٹو کمپنی نے پانچ دن کے لیے اپنا پیداواری یونٹ بند کر دیا…. جانیے کس ملک میں
انڈین آٹوموبائل ڈیولپرمینجمنٹ (سیام) نے پیر کو اگست19 میں گاڑی فروخت کے اعداد و شمار جاری کئے۔ اعداد و شمار کے مطابق اس سال اگست میں دو پہیہ والی گاڑیوں کی فروخت بھی گزشتہ سال کے اسی مدت کے مقابلہ میں 22.2 فیصد سے گھٹ کر 15.1 ملین یونٹس رہ گئی۔

سیام کے اعداد و شمار کے مطابق درمیانی اور بڑی کمرشل گاڑیوں کی فروخت بھی نصف سے کم رہ گئی۔ اس ضمن میں فروخت 54.3 فیصد کم ہو کر 15573 یونٹ رہی۔ ہلکی کمرشل گاڑیوں کی فروخت 28.2 فیصد کم ہو کر 36 ہزار 324 یونٹ رہی۔
ٹویوٹا اور ہنڈئی نے گاڑیوں کی پروڈکشن روک دی…. جانیے کس ملک میں
کمرشل گاڑیوں کی فروخت 38.7 فیصد کم ہو کر 51876 یونٹ رہی۔ مسافر گاڑیوں کی فروخت 31.6 فیصد سے کم ہوکر 1.96 ملین یونٹس رہی۔

گاڑیوں کی برآمدات میں 2.4 فیصد کا اضافہ ہوا اور یہ اگست میں 4.2 ملین یونٹس رہی۔ اعداد و شمار کے مطابق اپریل سے اگست کے پانچ ماہ میں کل گاڑی پیداور بھی 12.25 فیصد گھٹ کر ایک کروڑ 20 لاکھ 20 ہزار 944 گاڑیاں رہ گئیں۔ گزشتہ سال اس دوران ایک کروڑ 36 لاکھ 99 ہزار 848 گاڑیاں تیار کی گئی تھیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.