ورلڈ ہیڈر ایڈ

آزاد کشمیر کی طرح ہمسایہ ملک کا یہ علاقہ بھی جموں کشمیر کا حصہ ہے، ایک اور بھارتی شر انگیزی

بھارتی وزیر داخلہ نے آزاد کشمیر کی طرح ہمسایہ ملک چین کے علاقے اکسائی چن کے بھی مقبوضہ کشمیر کا حصہ ہونے کا دعویٰ کیا ہے،

باغی ٹی وی کی رپورٹ‌ کے مطابق بھارتی لوک سبھا میں آج بھی اپوزیشن جماعتوں نے کشمیر سے متعلق بھارتی فیصلہ کیخلاف شدید احتجاج کیا، اس دوران ہندوستانی وزیر داخلہ نے ہرزہ سرائی کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان کے زیر انتظام کشمیر کی طرح اکسانی چن بھی جموں‌کشمیر کا حصہ ہے،

ہندوستانی پارلیمنٹ کے دوران کانگریس لیڈر ادھیر رنجن چودھری نے یہ سوال اٹھایا کہ کیا ہندوستانی حکومت ایسے آئینی قرارداد اور بل لانے کی اہل ہے جبکہ حکومت وقتا فوقتا کہتی رہی ہے کہ جموں و کشمیر ہندوستان اور پاکستان کے درمیان دو طرفہ مسئلہ ہے، اس سلسلہ میں انہوں نے اقوام متحدہ میں 1949 میں کشمیر پر ایک واقعہ کا بھی حوالہ دیا۔ انہوں نے کہا کہ وہ حکومت سے وضاحت چاہتی ہے۔ کانگریس پارٹی جاننا چاہتی ہے،

بھارتی وزیر داخلہ نے کانگریس کے لیڈر کو کہا کہ وہ بتائیں کہ کیا ان کی پارٹی اس دلیل کی حمایت کرتی ہے کہ کشمیر تنازع کو اقوام متحدہ کے تحت حل کیا جانا چاہئے، اسی بحث کے دوران ڈی ایم کے کے ٹی آر بالو نے کہا کہ جموں و کشمیر میں غیر اعلانیہ ایمرجنسی نافذ ہے اور ریاست کے ٹاپ رہنماؤں گرفتار کیا گیا ہے اور کوئی نہیں جانتا ہے کہ کون کہاں ہے۔ انہوں نے پوچھا کہ ان کے دوست ڈاکٹر فاروق عبداللہ کہاں ہیں جو اس ایوان کے رکن ہیں تو بھارتی وزیر داخلہ نے کہاکہ وہ اپنی مرضی سے گھر پر ہیں انہیں نظربند نہیں‌ کیا گیا،

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.